مسلمانوں کے درمیان زمانی و مکانی اعتبار سے تقسیم کرنے کی سازش کررہا ہے، الشیخ محمد سلیم

مسلمانوں کے درمیان زمانی و مکانی اعتبار سے تقسیم کرنے کی سازش کررہا ہے، ...

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی)مسجد اقصیٰ کے امام و خطیب اور ممتاز فلسطینی عالم دین الشیخ محمد سلیم نے کہا ہے کہ اسرائیلی دشمن قبلہ اول کو یہودیوں اور مسلمانوں کے درمیان زمانی اور مکانی اعتبار سے تقسیم کرنے کی سازش کررہا ہے۔ انہوں نے فلسطینی عوام پر زور دیا کہ وہ قبلہ اول سے اپنا تعلق مضبوط کریں اور بچے، بوڑھے، مرد، عورت سب قبلہ اول کے سپاہی اور محافظ بن جائیں۔الشیخ محمد سلیم نے مسجد اقصیٰ میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ ہفتوں کے دوران صہیونیوں کی قبلہ اول پریلغار میں غیرمعمولی اضافہ ہوچکا ہے۔ صہیونی پرتشدد ہتھکنڈوں کے استعمال سے فلسطینیوں سے قبلہ اول چھین لینا چاہتے ہیں۔ قبلہ اول پر یہودیت کا رنگ چڑھانے کی سازش کی جا رہی ہے اور اسے یہودیوں اور مسلمانوں میں زمانی اور مکانی اعتبار سے تقسیم کرنے چالیں چلائی جا رہی ہیں۔

مسجد اقصیٰ کے امام نے کہا کہ قبلہ اول کا دفاع صرف اسی صورت میں ممکن ہے کہ فلسطینی عوام ہمہ وقت قبلہ اول سے اپنا تعلق قائم کرلیں۔ صبح وشام جب فلسطینی شہری قبلہ اول میں موجود ہوں گے تو صہیونی دشمن کو مقدس مقام کر تقسیم کرنے کی ہمت نہیں ہوگی۔الشیخ محمد سلیم نے قبلہ اول پریہودی یلغار اور مقدس مقام کو لاحق خطرات پرعالم اسلام اور عرب دنیا کو بھی جھنجھوڑنے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا اسلامی دنیا اور عرب ممالک کی مجرمانہ خاموشی قبلہ اول کیلئے نہایت خطرناک ہے۔ انہوں نے عالم اسلام سے باہمی اختلافات اور ایک دوسرے کے قتل عام کا سلسلہ بند کرکے قبلہ اول اور فلسطین کی آزادی کیلئے اپنی جدو جہد کو مجتمع کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ دشمن مسلمانوں کو فرقہ واریت، رنگ، نسل، قوم اور زبان و علاقے کی بنیاد پر تقسیم کرنے کے بعد انہیں آپس میں لڑا رہا ہے ،مسلمان اپنے اصل مشن سے پیچھے ہٹ چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسجد اقصیٰ کو پنجہ یہود سے چھڑانا ہرمسلمان کا اصل مشن ہونا چاہئے مگر بدقسمتی سے مقام معراج رسول ﷺاس وقت یہودیوں کے نرغے میں ہے اور ہم آپس میں ایک دوسرے کی گردنیں ما رہے ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...