اسرائیلی پابندیوں کیخلاف مسجد اقصیٰ میں ہزاروں نمازیوں کا احتجاجی مظاہرہ

اسرائیلی پابندیوں کیخلاف مسجد اقصیٰ میں ہزاروں نمازیوں کا احتجاجی مظاہرہ

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) اسرائیلی فوج اور پولیس کی جانب سے نمازیوں کو مسجد اقصیٰ میں آنے سے روکنے کیخلاف نماز جمعہ کے بعد ہزاروں افراد نے قبلہ اول کے باہراحتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جن پرفلسطینیوں کے قبلہ اول میں داخلے کیخلاف جاری صہیونی سازشوں کیخلاف نعرے درج تھے۔عینی شاہدین نے بتایا کہ نماز جمعہ کے بعد باہر نکلتے ہی ہزاروں نمازیوں نے صہیونی فورسز کیخلاف نعرے بازی شروع کردی۔ مظاہرین نے ناپاک صہیونی فوجیوں کے قبلہ اول میں داخل ہونے کی بھی شدید مذمت کی اور فلسطینیوں کو مسجد میں آنے سے روکنے کیخلاف نعرے بازی کی۔اس موقع پر مقامی رہنماؤں نے اپنی تقاریر میں کہا کہ اسرائیلی حکام سازش کے تحت فلسطینیوں کو قبلہ اول سے دور اور انتہاء پسند یہودیوں کو وہاں آنے کی ہرممکن سہولت فراہم کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی خواتین اور بچوں کو قبلہ اول سے بے دخل کرنا اسرائیل کی مذہبی دہشت گردی ہے۔اس موقع پر مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر الشیخ عمر الکسوانی نے خبردار کیا کہ یہودیوں کی فلسطینیوں کیخلاف جارحیت میں اضافہ سنگین نتائج مرتب کریگا اور اس کی تمام تر ذمہ داری اسرائیل پرعائد ہوگی۔انہوں نے کہا کہ اسرائیلی فوج اورپولیس کی جانب سے مسجد اقصیٰ کے محافظوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے تاکہ وہ مقدس مقام کے تحفظ سے دست بردار ہوجائیں۔ انہوں نے عالم اسلام سے مطالبہ کیا کہ وہ قبلہ اول کے دفاع کو اولین ترجیحات میں شامل کریں اور یہودیوں کے ہاتھوں قبلہ اول کے تقدس کی پامالی کا سلسلہ بند کرانے کیلئے ٹھوس اقدامات کریں۔

مزید : عالمی منظر


loading...