سرکاری کالجوں میں انٹرمیڈیٹ کے ایک لاکھ کے قریب طلبہ داخلے سے محروم

سرکاری کالجوں میں انٹرمیڈیٹ کے ایک لاکھ کے قریب طلبہ داخلے سے محروم

لاہور(لیاقت کھرل) صوبائی دارالحکومت میں قائم58سرکاری کالجوں میں ایک لاکھ کے قریب ایف اے اور ایف ایس سی کے طلباوطالبات داخلوں سے محروم ہو گئے جس پر پرائیویٹ کالجوں میں داخلوں کا رش اوروالدین کئی گنا اضافی فیسیں دینے پر مجبور ہیں۔تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے شہر میں واقع سرکاری کالجز کی انتظامیہ کو ایف اے اور ایف ایس سی کے داخلوں میں ایک لاکھ سے زائد طلبا ء وطالبات کو داخل کرنے کا ٹاسک دیا گیا تھا۔جس میں لاہور کے 58سرکا ری کا لجز میں سے چار بڑے کالجز کی انتظامیہ نے ہائی میرٹ کی بنیاد پر 6500تا7000کے قریب طلبا وطالبات کو داخلے دیے۔سرکاری کالجز کی انتظامیہ 50ہزار سے زائد طلبا وطالبات کو داخلے دے کر حکومت کو سمری بھجوا دی ہے۔جس میں کالجز میں سٹاف کی کمی ،ناقص عمارتوں اورکمروں کی تعداد میں کمی کا بہانہ بنایا گیا ہے۔محکمہ تعلیم کے ترجمان کا کہنا ہے کہ سرکاری کالجز میں گنجائش سے زیادہ انٹرمیڈیٹ کے طلبا وطالبات کو داخلے دیے گئے ہیں۔اس میں زیادہ سے زیادہ داخلے کرنے کیلئے کالجز میں سیکنڈ شفٹ میں بھی داخلے دیے گئے ہیں۔ترجمان کا کہنا ہے کہ لاہور کے کالجز کی تعداد بڑھانے کے ساتھ ساتھ تمام کالجز میں سیکنڈ شفٹ شروع کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...