جیوانی ایئرپورٹ پر سول ایوی ایشن کے ریڈار پردہشتگردوں کا حملہ ،دوانجینئرشہید،ایک شدید زخمی ، سکیورٹی فورسز کا علاقے میں سرچ آپریشن

جیوانی ایئرپورٹ پر سول ایوی ایشن کے ریڈار پردہشتگردوں کا حملہ ...
جیوانی ایئرپورٹ پر سول ایوی ایشن کے ریڈار پردہشتگردوں کا حملہ ،دوانجینئرشہید،ایک شدید زخمی ، سکیورٹی فورسز کا علاقے میں سرچ آپریشن

  


گوادر(مانیٹرنگ ڈیسک)جیوانی ائیر پورٹ پر دہشت گردوں کے حملے میں سول ایوی ایشن کے انجینئر خلیل اللہ شہید جبکہ الیکٹرانک سپر وائزر انجینئر الطاف حسین شدید زخمی ہوگئے، دہشت گرد ایک سینئر اہلکار محمود اللہ کو اغوا کر کے لے گئے جنہیں جیوانی ایئرپورٹ سے کچھ فاصلہ پرفائرنگ کر کے شہید کر دیا گیا جہاں مقامی انتظامیہ نے ان کی لاش برآمد کر لی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق صبح تین بجے جیوانی ائیر پورٹ پردہشتگردوں نے اچانک حملہ کر دیا اس دوران ریڈار سسٹم کو بھی آگ لگا دی اوروہ فائرنگ کرتے فرار ہو گئے۔زخمی ہونیوالے انجینئر کو ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ جاں بحق ہونیوالے انجینئر خلیل اللہ کی نعش کراچی منتقل کرنے کے لئے پاک بحریہ سے رابطہ کیا گیادوسری جانب پولیس اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے دہشتگردوں کی گرفتاری کے لئے علاقے میں سرچ آپریشن اورشہر کے تمام داخلی اور خارجی راستوں کو سیل کر کے جامعہ تلاشی کا عمل شروع کر دیا ،اے ایس ایف نے بھی گشت میں اضافہ کر دیا ہے ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ جیوانی ریڈار پر دہشتگرد حملے کے بعد کوئٹہ ،گوادر، دارالبدین اورپسنی میں ریڈ الرٹ جاری کر دیا گیا ہے جبکہ کوئٹہ اورگوادر ایئرپورٹ کے عارضی پاس معطل کر دیئے گئے ہیں۔مقامی انتظامیہ کے مطابق اغواکئے گئے انجینئر محمود نیازی کی لاش جیوانی ایئرپورٹ سے کچھ فاصلے پر ملی ہے ، دہشتگردوں نے انہیں فائرنگ کر کے قتل کیا ۔

یادرہے کہ جیوانی ایئرپورٹ گذشتہ 20سال سے غیرفعال ہے۔

مزید : کوئٹہ /Headlines


loading...