پاکستان اپنے ایٹمی ہتھیاروں کی حفاظت کو سنجیدیگی سے لیتاہے:امریکا

پاکستان اپنے ایٹمی ہتھیاروں کی حفاظت کو سنجیدیگی سے لیتاہے:امریکا
پاکستان اپنے ایٹمی ہتھیاروں کی حفاظت کو سنجیدیگی سے لیتاہے:امریکا

  


واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکا نے کہا ہے کہ پاکستان اپنے ایٹمی ہتھیاروں کی حفاظت کی ذمہ داری کو سنجیدگی سے لیتا ہے اور امریکا نے بھی پاکستان کے بعد امریکی روزنامے کی رپورٹ کو مسترد کر دیاہے۔ بی بی سی کے مطابق وائٹ ہاو¿س کے پریس سیکریٹری جوش ایرنسٹ نے یہ بیان واشنگٹن پوسٹ میں ایک امریکی تھینک ٹینک کی شائع ہونے والی رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے دیاہے۔رپورٹ میں دعوی کیا گیا تھا کہ اگلے دس سالوں میں پاکستان ایٹمی ہتھیاروں کے ذخیرے کے حوالے سے امریکا اور روس کے بعد تیسرے نمبر پر آ جائے گا۔

ایرنسٹ نے کہا ’ہمیں یقین ہے کہ حکومت پاکستان اپنی ذمہ داریوں سے آگاہ اور ان کو سنجیدگی سے لیتا ہے‘۔

ایرنسٹ نے بتایا کہ انہوں نے تھینک ٹینک کی رپورٹ دیکھی ہے لیکن اس معاملے پر ایسا کوئی سرکاری تجزیہ موجود نہیں جسے میڈیا سے شیئر کیا جا سکے۔انہوں نے کہا صدر بارک اوباما’ایٹمی ہتھیاروں سے پاک دنیا‘ کا طویل المیعاد ہدف رکھتے ہیں۔

اوباما ہر دوسرے سال اس ہدف کی تشہیر کیلئے عالمی کانفرنس بھی منعقد کرتے ہیں اور یہ آئندہ بھی ان کی خارجہ پالیسی میں ترجیحی ہدف رہے گا۔ایرنسٹ نے بتایا کہ اگلی ایٹمی کانفرنس اگلے سال واشنگٹن میں منعقد ہو گی۔وائٹ ہاو¿س کے پریس سیکریٹری نے مزید کہا ’دوسری اہم بات یہ ہے کہ ان ذخائر کی حفاظت پاکستان اور اس جیسے دوسرے ملکوں کی ذمہ داری بنتی ہے‘۔

مزید : بین الاقوامی


loading...