حکومت کا تیل کی قیمتوں میں سات روپے کے بجائے تین روپے کمی پر غور

حکومت کا تیل کی قیمتوں میں سات روپے کے بجائے تین روپے کمی پر غور
حکومت کا تیل کی قیمتوں میں سات روپے کے بجائے تین روپے کمی پر غور

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے ایف بی آر کے مطالبے پر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اوگرا کی سفارش کردہ سمری کے مطابق قیمتوں کمی نہ کر کے 10 سے 15ارب روپے کی اضافی ٹیکس وصولیوں پر غور شروع کر دیا۔ایکسپریس کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اوگرا کی سفارش کے مطابق 7 روپے کے بجائے صرف 2 سے 3 روپے کا ریلیف دینے پر غور کیا جارہاہے، حتمی فیصلہ 31 اگست کو کیا جائیگا۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر نے قیمتیں کم کرنے کی مخالفت کی ہے کہ قیمتیں کم کرنے سے ٹیکس وصولیاں کم ہونگی اور ٹیکس وصولیوں کا ہد ف پورا نہیں ہو سکے گا۔ آئل کمپنیاں بھی کہہ رہی ہیں کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم کرنے سے انھیں خسارہ ہو گا، اس لیے حکومت نے صرف2 سے 3 روپے کا ریلیف دینے پر غور شروع کر دیا ہے۔

مزید : بزنس


loading...