خلیجی سیاحوں کا روپ دھار کر چوریاں کرنے والے چور پولیس نے دھر لئے

خلیجی سیاحوں کا روپ دھار کر چوریاں کرنے والے چور پولیس نے دھر لئے
خلیجی سیاحوں کا روپ دھار کر چوریاں کرنے والے چور پولیس نے دھر لئے

  


پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک) جیسے جیسے زمانہ ترقی کر ر ہا ہے ویسے ویسے چوروں کی چوریوں کے طریقے بھی جدت اختیارکرتے جا رہے ہیں ۔ چوریوں کے ایسے نت نئے طریقے سننے کو ملتے ہیں کہ عقل دنگ رہ جائے ۔ ایسی ہی ایک دلچسپ طریقہ واردات پر مبنی چوری کی کہانی فرانس میں سامنے آئی جب پولیس حراست میں دو چوروں نے اپنے واردات کے طریقے کو بیان کرتے ہوئے بتایا کہ وہ کس طرح فرانس کے بڑ ے بڑے ہوٹلوں میں چوریاں کرتے تھے۔ بی بی سی کے مطابق ان دونوں افراد کی عمر 56 سال اور 31 سال ہے اور انھیں فرانس میں سینیٹ ایٹنی کے ایک ہوٹل سے حراست میں لیا گیا ہے۔

چوروں کا کہنا ہے کہ وہ جو خلیجی ممالک کے سیاحوں کا روپ دھار کر ہوٹل کے کمروں میں نصب تجوریاں چراتے تھے۔اس مقصد کےلئے وہ بڑے ہوٹلوں کے استقبالیہ پر پہنچ کر یہ ظاہر کرتے تھے وہ اس ہوٹل میں قیام پذیر ہیں لیکن اُن کے کمرے کی چابی کھو گئی ہے اور اس طرح وہ کمروں تک رسائی حاصل کرتے تھے۔پولیس کا کہنا ہے کہ چور کمروں کے دروازوں پر سٹیتھو سکوپ کی مدد سے یہ جاننے کی کوشش کرتے کے کمرا خالی ہے یا نہیں۔یہ دونوں افراد پیرس اور سیاحتی مقام فرنچ رویرا کے علاقے میں مہنگے ہوٹلوں میں کارروائیاں کرتے تھے۔پولیس کے مطابق ان مشتبہ افراد کی شناخت اس سے قبل ہونے والی چوری کی واردات کی سی سی ٹی وی کیمرہ سے لی گئی ویڈیوز اور تصاویر کی مددسے کی گئی ہے۔

حکام کے مطابق یہ افراد ہوٹل کے کمروں میں نصب تجوریوں کو الماری سے نکالنے کے بعد سوٹ کیس میں ڈال کر ہوٹل سے باہر لے جاتے تھے۔فرانسیسی ریڈیو کے مطابق پولیس نے ملزمان کے قبضے سے 80 ہزار یورو مالیت کے زیورات، قیمتی کپڑے اور غیر ملکی کرنسی برآمد کی گئی ہے۔ملزمان کے قبضے سے ہوٹل کے کمروں کی 20 چابیاں، ہتھوڑی، چھینی اور سٹیتھو سکوپ برآمد ہوئی ہے ۔

مزید : جرم و انصاف


loading...