کروڑوں کی لاگت سے بنائی جانیوالی ڈرگ ٹیسٹنگ لیبارٹری کا سافٹ ویئر خراب

کروڑوں کی لاگت سے بنائی جانیوالی ڈرگ ٹیسٹنگ لیبارٹری کا سافٹ ویئر خراب

  

لا ہور (جنر ل ر پو رٹر )دو ماہ قبل کروڑوں روپے کی لاگت سے بننے والی ڈرگ ٹیسٹنگ لیبارٹری کا سافٹ ویئر خراب ، ہسپتالوں میں پڑا ادویات کا سٹاک استعمال میں نہیں آ رہا۔تفصیلا ت کے مطا بق وزیراعلیٰ پنجاب نے صوبے بھر کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کی قلت دور کرنے کیلئے ایک ارب روپے کی خصوصی گرانٹ دی تھی۔ جون میں محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ نے ایک ارب سے زائد کی ادویات خرید کر ہسپتالوں کو فراہم کر دی تھیں۔تاہم ان ادویات کے سینکڑوں نمونے دو ماہ بعد بھی ٹیسٹ نہیں ہو سکے۔ایڈیشنل سیکرٹری ڈرگ ڈاکٹر سہیل کا کہنا تھا کہ پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے اشتراک سے ڈی ٹی ایل کی کمپیوٹرائزیشن کی گئی۔جس میں خرابی آئی ہے جبکہ یہ معاملہ پی آئی ٹی بی حکام کے علم میں لایا گیا ہے۔ ڈاکٹر سہیل کے مطابق جلد اس نقص کو دور کر لیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -