پاکستان نیوی ریسیکیو 1122کی فورس کو ہر قسم کی معاونت فراہم کریگی ، کموڈورایس ایم شہزاد

پاکستان نیوی ریسیکیو 1122کی فورس کو ہر قسم کی معاونت فراہم کریگی ، کموڈورایس ...

  

 لا ہور (کر ا ئم ر پورٹر )اسٹیشن کمانڈر لاہور پاکستان نیوی کموڈور ایس ایم شہزاد(ایس آئی ملٹری ) نے گزشتہ روز ایمرجنسی سروسز اکیڈمی (ریسکیو 1122)کا دورہ کیا ، زیر تربیت ریسکیو کیڈٹس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس دھرتی کے بیٹے ہونے کے ناتے ہمیں لگن، ہمت اور واضح مقاصد کے ساتھ پاکستان کو ریسکیو کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریسکیورز معزز روزگار کے ساتھ ساتھ سانحات میں زندگیاں بچا کر اللہ کی خوشنودی حاصل کرنے کا فریضہ سرانجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریسکیو 1122کی شاندار کارکردگی سے اس تربیتی ادارے میں فراہم کی جانے والی ڈزاسٹر منیجمنٹ کی تربیت کے معیار کا انداز ہ ہوتا ہے۔اس موقع پر کموڈور ایس ایم شہزاد کو ایمرجنسی سروسز اکیڈمی کے منڈیٹ اور ذمہ داریوں بارے بریفنگ دی گئی ۔انہیں مزید بتایا گیا کہ یہ اکیڈمی سارک ممالک کے لئے ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے جبکہ دیگر صوبوں کو مفت پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرنے کی وجہ سے یہ ایک نیشنل سنٹر آف ایکسیلنس میں ڈھل چکی ہے۔ تفصیلات کے مطابق کموڈور ایس ایم شہزاد نے ایمرجنسی سروسز اکیڈمی کا دورہ کیا اور ڈائریکٹر جنرل بریگیڈئر (ر)امیر حمزہ سے تفصیلی ملاقات کی۔ ملاقات میں انہوں نے ڈائریکٹر جنرل کو یقین دلایا کہ پاکستان نیوی ریسکیو 1122کی ڈزاسٹر ریسپانس فورس کو ہر قسم کی تکنیکی معاونت اور فلڈ منیجمنٹ کی مہارتوں میں اضافہ کے لئے ہرقسم کی معاونت فراہم کرے گی۔ انہوں نے اس عزم کا بھی اظہار کیا کہ آئندہ سانحات بشمول سیلاب اور زلزلہ سمیت دیگر قدرتی آفات میں پاکستان نیوی ریسکیو 1122کے ہمراہ کندھے سے کندھا ملا کر چلے گی۔ قبل ازیں اپنے خطبہ استقبالیہ میں ڈائریکٹر جنرل بریگیڈئر امیر حمزہ نے کہا پاکستان نیوی پاکستان کی آرمڈ فورسز کا انتہائی اہم رکن ہے چاہے ایکسکلوسیو زون ہو یا قدرتی سانحات سے نبر د آزما ہونا ہو پاکستان نیوی کا کردار قابلِ تعریف رہا ہے۔ انہوں نے کموڈر ایس ایم شہزاد کی تین دہائیوں پر محیط خدمات کی بھی تعریف کی۔ کموڈور پاکستان نیوی نے مزید کہا کہ اُنہیں یہ جان کر خوشی ہوئی ہے کہ چاہے صحرائی آفت ہو یا سیلاب ہو ریسکیورز ایمرجنسیز پر ریسپانڈ کرنے اور لوگوں کو محفوظ بنانے کے لئے ہردم تیار رہتے ہیں۔انہوں نے ریسکیورز پر زور دیا کہ وہ خود سے مقابلہ کریں اپنے اندر خوابیدہ صلاحیتوں کو مزید دریافت کریں کیونکہ اُنہیں ہروقت نظر نہ آنے والے دشمن جیسے آتشزدگی، عمارتیں منہدم ہونے یا دیگر ایمرجنسیز سے نبرد آزما ہونا ہوتا ہے۔ کموڈور نے ایمرجنسی سروسز اکیڈمیں پودا بھی لگایا ۔

مزید :

علاقائی -