پنجاب اسمبلی ، چائلڈ لیبر بل منظور ، 6ماہ قید ، 5لاکھ تک جرمانہ ہو سکے گا

پنجاب اسمبلی ، چائلڈ لیبر بل منظور ، 6ماہ قید ، 5لاکھ تک جرمانہ ہو سکے گا

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں مسودہ (ریلیف بحالی) دہشت گردی سے متاثرہ سویلین پنجاب2016۔ سمیت تین بلوں کی منظوری اپوزیشن تحاریک کثرت رائے سے مسترد ۔ چائلڈ لیبر بل کی منظوری سے اب پنجاب میں14سال سے کم بچے مشقت لینے والوں کو7دن سے6ماہ قید اور50ہزار سے5لاکھ جرمانے کی سزا ملے گی،اگر کوئی سویلین دہشت گردی کا شکار ہوجاتا ہے اور وہ فوت جاتا ہے تو اس کے لواحقین کو 10لاکھ اور شدیدزخمی کو5لاکھ ملیں گے بچوں کی کفالت بھی کی جائیگی،اجلاس میں فیصل آباد ،ملتان،گوجرانوالہ راولپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹیز اور پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی کی رپورٹس بھی ایوان میں پیش کی گئیں،گذشتہ روز پنجاب اسمبلی میں منظور ی کے لئے تین بل پیش کئے گئے پہلا بل مسودہ قانون بھٹہ خشت پر چائلڈ پروٹیکشن کی ممانعت پنجاب 2016ء کا بل تھا جسے کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا اس بل کی منظوری کے بعد اب کوئی بھی بھٹہ مالک یا والدین یا سرپرست14سال سے کم عمر بچے سے چائلڈ لیبر نہیں لے سکے گا ، ایسا کرانے والے کو 7دن سے لیکر6ماہ تک قید اور 50ہزار روپے سے لیکر 5لاکھ روپے تک جرمانے کی سزا ہوگی،اس بل میں اپوزیشن کی طرف سے6ترامیم ایوان میں پیش کی گئیں جنہیں کثرت رائے سے مسترد کردیا گیا۔دوسرا بل مسودہ قانون (ترمیمی بل) سول کورٹس پنجاب 2016ء ایوان میں صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے پیش کیا اس بل پر اپوزیشن کی طرف سے ایک ہی ترمیم ایوان میں پیش کی گئی جو کہ کثرت رائے سے مسترد کردی گئی جبکہ دوسری اپوزیشن نے واپس لے لی۔،پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں تیسرا بل مسودہ (ریلیف بحالی) دہشت گردی سے متاثرہ سویلین پنجاب2016ایوان میں پیش کیا گیا اس بل کی منظوری کے بعد اب اگر کوئی سویلین پنجاب میں دہشت گردی کی بھینٹ چڑھ جاتا ہے اور وہ شہید ہوجاتا ہے تو حکومت کی طرف سے اس کے لواحقین(بیوہ یا زیر کفالت) بچوں کو10لاکھ روپے دئے جائیں گے ، بچوں کی تعلیم تربیت بھی حکومت کے ذمہ ہوگی، اگر دہشت گردی کا شکار ہونے والا بہت زیادہ تکلیف دہ حالت میں زخمی ہے یا کوئی عضو کٹ جاتاہے اور اس میڈیکولیگل پنجاب یا اسٹینڈنگ میڈیکل بورڈکی رپورٹ پر کوئی عضو کٹ جاتا ہے یا ناکارہ ہو جاتا ہے تو اس شکل میں5لاکھ روپے دئے جائیں گے ، علاج بھی فری حکومت کرائے گی،اور اگر زخمی دو ہفتوں تک کام نہیں کرسکتا تو حکومت کی طرف سے ایک لاکھ روپے ملیں گے۔ اگر دہشت گردی میں ایک شص کی رہائش مکمل تباہ ہو جاتی ہے بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کی رپورٹ پرمکمل تباہی پر5لاکھ اورجزوی تباہی پر ایک لاکھ روپے ملیں گے اسی طرح دکان یا کوئی اور کاروباری تباہ ہو تو اسے بھی مکان کی طرف ہی سلوک کیا جائے گا۔اگر گاڑی(بس ٹرک یا کوئی ہیوی وہیکل) تباہ ہوئی تو موٹر وہیکل ایگزامینر کی رپورٹ پر شدید نقصان پر 5لاکھ معمولی نقصان پر ایک لاکھ روپے ملیں گے۔کار جیب یاکوئی دیگر چار یا تین پہیوں والی گارٰ کے زیادہ نقصان پر2لاکھ معمولی نقصان پر40ہزار روپے موٹر وہیکل رپورٹ پر ملیں گے مو ٹرسائیکل یا سکوٹر کے نقصان پر 20ہزار روپے ملیں گے۔گائے بھینس،بیل ،گھوڑے یا گدھے کی صورت میں50ہزار جبکہ بھیڑ بکری کی صورت میں10ہزار روپے ملیں گے ۔تینوں بل وزیر قانون رانا ثناء اللہ خان نے ایوان میں پیش کئے اپوزیشن کی ترامیم اس بل پر 8ایوان میں پیش کی گئیں تھی جو کہ انہوں نے واپس لے لیں اور اس طرح یہ بل متفقہ طور پر منظور کیا گیا۔ اس سے قبل ایوان میں ا جلاس میں فیصل آباد ،ملتان،گوجرانوالہ راوالپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹیز اور پارکس اینڈ آرٹیکلچر اتھاٹری کی رپورٹس بھی پیش کی گئیں۔

پنجاب اسمبلی

مزید :

صفحہ آخر -