مہمند ایجنسی ،دانشکول میں معدنیات کی کانوں پر افغان مہاجرین کا قبضہ

مہمند ایجنسی ،دانشکول میں معدنیات کی کانوں پر افغان مہاجرین کا قبضہ

  

شبقدر نمائندہ (نمائندہ خصوصی ) مہمند ایجنسی کے علاقہ دانشکول میں معدنیات کے کانوں پر افغان محاجرین ٹھیکداروں کا قبضہ ، جعلی طریقے اور رشوت کے بنیاد پر پر افغان محاجر حامد حاجی عرف تور لالے نے بغیر کسی جرگہ کے اور رسم رواج کے دانشکول میں معدنیات کے پہاڑوں پر قبضہ کیا ہو ا ہیں، پولیٹیکل انتظامیہ مہمند ، اور دیگر کے میل ملاپ سے مہمند قوم کا استحصال ہورہا ہیں، چند پیسوں کی حاطر علاقہ کے یتیموں ، بیواؤں اور غریب کا حق ناجائز طریقے سے کھایا جارہا ہیں، نام نہاد ٹھیکدار افغان محاجر حامد حاجی عرف تور لالے نے جعلی طریقے سے نادرا کا شناختی کارڈ حاصل کیا ہیں، ریکارڈ کے مطابق سارا ریکارڈ جعلی ہیں، مہمند قوم کے مشران شیر محمد خان، حاجی سبزعلی دانشکول ٰ خلیل حاجی ، میر حسین،ملک رابت خان، اور ساجد خان نے انتظامیہ ، گورنر خیبر پُختون خوا ، وزیر داخلہ، سمیت انٹلی جنس آداروں سے فوری ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہیں، تفصیلات کے مطابق مہمند قبائل کے مشران اور عمائیدین شیر محمد خان، حاجی سبزعلی دانشکول، خلیل حاجی، میر حسین، ملک رابت خان، اور ساجد خان نے بحجرہ ملک رابت خان ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا ہیں، کہ پولیٹیکل ایجنٹ سمیت پولیٹیکل انتظامیہ ایک افغان محاجر اور نام نہاد ٹھیکدار معدنیات پہاڑدانشکول حامد حاجی عرف تور لالے کو سپورٹ فراہم کرکے قوم کا استحصال کررہا ہیں، مذکورہ افغان محاجر نے جعلی طریقے سے اور غیر قانونی اور غیر رسمی اور رواج کے خلاف دانشکول معدنیات کے پہاڑوں پر قبضہ کیا ہوا، مذکورہ افغان محاجر دونوں ہاتھوں سے ملکی اور قومی دولت باہر کے ملکوں کا منقل کررہا ہیں، افغان محاجر نے قومی مشران کے جرگوں کو نظر انداز کرکے انتظامیہ کی مدد رشوت کے بھل بھوت پر حاصل کیا ہیں، جس سے علاقہ کے غریب ، یتیموں اور بیواؤں کا حق غیر قانونی طریقے سے کھایا جارہا ہیں، اس افغان محاجر نے جعلی طریقے سے نادرا کا شناختی کارڈ مہمند ایجنسی سے حاصل کیا ہیں، جس میں بھی لاکھوں روپے کا رشوت استعمال کیا گیا ہیں، تصدیق کنندگان کے دستحط بھی جعلی ہیں، کیونکہ مذکورہ افغان محاجر پشاور میں رہتا ہیں، مگر شناختی کارڈ مہمند ایجنسی سے حاصل کیا ہیں، ایک افغان محاجر مہمند قوم کے آثاثہ جات اپنے دولت کے بنیاد پر ہاتھوں میں لیکر باہر ملک منتقل کررہا ہیں، ان سب کے پیچھے رشوت اور غیر قانونی طریقے سے پیسے کا استعمال ہیں، انہوں نے وزیر داخلہ پاکستان، انٹلی جنس آداروں ، گورنر خیبر پُختون خوا اور فاٹا سیکرٹریٹ سے فوری ایکشن لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے ان کے تمام آثاثہ جات اور دیگر کو دھوکہ دہی کے بنیاد پر ضبط کرنے اور کاروائی کا مطالبہ کیا ہیں،

مزید :

کراچی صفحہ اول -