ماں نے قربانی کی نئی تاریخ رقم کر دی ، اپنی سانسیں 2 سالہ بچے کو دے کر اس کی جان بچا لی، جان دے کر اپنی محبت امر کر دی

ماں نے قربانی کی نئی تاریخ رقم کر دی ، اپنی سانسیں 2 سالہ بچے کو دے کر اس کی جان ...
ماں نے قربانی کی نئی تاریخ رقم کر دی ، اپنی سانسیں 2 سالہ بچے کو دے کر اس کی جان بچا لی، جان دے کر اپنی محبت امر کر دی

  

نیویارک(نیوزڈیسک) ماں ایک ایسی نعمت ہے جو اپنی ہر خوشی قربان کرکے اولاد کو خوشی دیتی ہے لیکن اس امریکی خاتون نے اپنی جان دے کر ثابت کردیا کہ ماں کسی بھی نسل سے تعلق رکھتی ہواسے اپنے بچوں سے پیار ہوتا ہے اور وہ ان کے لئے کسی بھی حد تک جاسکتی ہے۔تفصیلات کے مطابق دوبچوں کی ماں 35سالہ چیلسی رسل اپنے بچوں کے ساتھ امریکی ریاست یوٹا کی جھیل پر چھٹیاں گزارنے گئی تھی،یہ جھیل 186میل لمبی ہے اور یہ یوٹا اور ایری زونا کی سرحد پر واقع ہے۔جھیل کی سیر کے دوران اسے یکدم آواز آئی کہ کوئی چیز پانی میں گری ہے ،اس نے فوراًدیکھا تو سامنے اس کا دو سالہ بچہ پانی میں گرچکا تھا۔اس نے آﺅ دیکھا نہ تاﺅ اور پانی میں چھلانگ لگادی اور بچے کو اوپر اٹھالیا جبکہ ان کے دیگر رشتے دار جو کہ دور تھے ان کے پاس آنے کی تگ و دو کرنے لگے۔انہیں کافی مشکل کے بعد پانی میں سے نکالا گیا اور ہسپتال منتقل کیا گیا لیکن اس دوران خاتون کی موت واقع ہوچکی تھی جبکہ دو سالہ بچہ خطرے سے باہر ہے۔خاتون کے رشتے داروں کا کہنا ہے کہ چیلسی نے بہادری کا ثبوت دیتے ہوئے اپنی جان دے کر بچے کی جان بچالی۔پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون نے بچے کو پانی میں اٹھارکھا تھا تاکہ وہ پانی سے محفوظ رہے لیکن اس کوشش میں وہ خود غوطے کھاتی رہی اور اپنی جان دے کر بیٹے کی جان بچالی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -