لندن رابطہ کمیٹی کے مشورے پالیسی کے مطابق ہونگے تو تسلیم کیے جائیں گے:ڈاکٹر فارق ستار

لندن رابطہ کمیٹی کے مشورے پالیسی کے مطابق ہونگے تو تسلیم کیے جائیں گے:ڈاکٹر ...
لندن رابطہ کمیٹی کے مشورے پالیسی کے مطابق ہونگے تو تسلیم کیے جائیں گے:ڈاکٹر فارق ستار

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماءڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ لندن رابطہ کمیٹی سے پاکستان ایم کیو ایم کے فیصلوں سے کوئی تعلق نہیں ہے،مشورے پالیسی کے مطابق ہونگے تو تسلیم کیے جائیں گے لیکن مسلط نہیں کیے جاسکتے۔

دنیا نیوز کے پروگرام نقطہءنظر میں گفتگو کرتے ہوئے متحدہ قومی موومنٹ کے رہنماءڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ لندن رابطہ کمیٹی سے پاکستان ایم کیو ایم کے فیصلوں سے کوئی تعلق نہیں ہے،مشورے پالیسی کے مطابق ہونگے تو تسلیم کیے جائیں گے لیکن مسلط نہیں کیے جاسکتے۔

انہوں نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی رجسٹریشن کے مطابق پارٹی کا سربراہ ہوں،پاکستان کے آئین اور قانون کو مقدم سمجھتے ہیں،فیصلوں میں ایم کیو ایم آزاد ہے۔ایک دو روز میں پارٹی کا منشور پڑھ کرسنائیں گے،ضرورت پڑی تو منشور میں تبدیلی کرینگے،ندیم نصرت ساری صورتحال کو سمجھتے ہیں۔

بطور میئر کراچی وسیم اختر نے کن باتوں کا حلف اٹھایا؟ آپ بھی جانئے

انہوں نے کہا ہے کہ متحدہ کے کچھ رہنما اپنی ذاتی مجبوریوں کے تحت منظر عام پر نہیں ہیں جلد واپس آ جائیں گے،دستور میں صوابدیدی اختیارات کا ذکر موجود نہیںہے،وسیم اختر کے مزار قائد پر حاضری پر پابندی کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی،نئے میئر کے انتخاب سے کراچی کو سرپرست مل گیا ہے،حیدر عباس رضوی کینیڈا میں جلد واپس آ جائیں گے۔

مزید :

قومی -