ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی سے ملاقات

ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی سے ملاقات
 ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی سے ملاقات

قومی اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی کے دفتر پہنچا دفتر میں ایم این ایز اور لوگوں کا ہجوم تھا لوگ باری باری ملاقات کر رہے تھے ۔اراکین قومی اسمبلی کے علاوہ فاٹا کے مختلف ایجنسیوں سے آئے ہوئے لوگ بھی تھے ۔ڈپٹی سپیکر خوشگوار موڈ میں فرداًفرداًقبائلی عمائدین کے ساتھ ملے اور فاٹا کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا ۔ ڈپٹی سپیکر کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت کے اقدمات کی وجہ سے فاٹا میں امن و امان قائم ہوچکا ہے ۔ فاٹا میں سیاسی و انتظامی اصلاحات کے نفاذکے لئے حکومت اقدمات اٹھا رہی ہیں ترقی اور خوشحالی کے ثمرات قبائلی عوام تک پہنچ چکے ہیں ۔ 2018ء تک ملک سے انرجی بحران کا خاتمہ ہو جائے گا، کیونکہ انرجی بحران سے ملک کی معیشت کو نا قابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔

حکومت نے بلو چستان، کراچی، سمیت فاٹا میں امن و امان کی بحالی کے تمام تر اقدامات اٹھائے ہیں، کیونکہ عام آدمی کے جان و مال کا تحفظ حکومت کی اولین ترجیح ہے، حکومت کے اقدمات کی وجہ سے ملک میں امن وامان کی صورت حال بہتر ہو چکی ہے۔

2013ء کے انتخابات میں مرتضیٰ جاوید عباسی نے قومی اسمبلی کی نشست NA-18ایبٹ آباد پر تحریک انصاف کے امید وار سردار محمد یعقوب اور تحریک صوبہ ہزارو کے چیئر مین بابا حید رزمان کو شکست دے کر کامیابی حاصل کی ۔2008ء کے انتخابات میں بھی مسلم لیگ (ن ) کے ٹکٹ پر سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی سردار یعقوب کو شکست سے دو چار کیا تھا جو کہ اس وقت مسلم لیگ ( ق) کے ٹکٹ پر انتخاب لڑ رہے تھے ۔2013ء کے انتخابات میں خیبر پی کے میں تحریک انصاف کی ہوا چلی اور پی ٹی آئی نے کامیابی حاصل کی، لیکن مرتضیٰ جاوید عباسی نے تحریک انصاف کے امیدوار سردار یعقوب کو شکست دی اس کی وجہ ان کا اپنے حلقے کے عوام کے ساتھ قریبی رابطہ تھا، جبکہ وہ ایم این اے تھے تو عام آدمی بھی، جب انہیں موبائل پر کال کر تا تھا، خود اٹھاتے تھے، ایسے ارکان اسمبلی بہت کم ہوتے ہیں جو کامیابی کے بعد عام آدمی سے رابطہ رکھیں، لیکن مرتضیٰ جاوید عباسی میں یہ اوصاف پائے جاتے ہیں کہ ڈپٹی سپیکر کے منصب پر پہنچنے کے بعد بھی عام آدمی کی کال خود اٹھاتے ہیں ہر وقت چہرے پر مسکراہٹ رہتی ہے اور عوام کی خدمت کو اپنا فرض سمجھتے ہیں۔

جناب قائد محمد نواز شریف، وزیر اعظم شاہدخاقان عباسی اور خادم اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی توجہ اس طرف مبذول کرانا چاہتا ہوں کہ ارکان اسمبلی ، سنیٹرز اور وزراء کو ہدایات جاری کریں کہ مرتضیٰ جاوید عباسی کی طرح عوام کی خدمت کو اپنا شغار بنائیں اور خادم پنجاب محمد شہباز شریف کے ویثرن کی طرح عام آدمی کی خدمت کریں اور عوام کے دکھ و درد کو اپنا درد سمجھیں میرٹ کی بنیاد پر کام کریں کرپشن کے خلاف اعلان جنگ کریں اور گڈ گورننس کی ایسی مثالیں قائم کریں جیسا کہ گذشتہ9سالوں میں پنجاب میں محمد شہباز شریف نے قائم کی ہیں اور ان کی میرٹ کی پالیسی کو دنیا بھر میں سراہا جاتا ہے ۔

عام آدمی کے اعتماد کی بحالی کے لئے ارکان اسمبلی اپنے حلقوں میں ترقیاتی فنڈز کو شفاف طریقے سے خرچ کریں اور کمیشن کے کلچر کو ختم کریں کرپٹ سرکاری اہلکاروں کے خلاف کارروائی کریں ، ایماندار اور فرض شناش افسران کو اپنی ٹیم کا حصہ بنائیں ،پٹواری کلچر کا خاتمہ کریں اور موجودہ تھانہ کلچر کی تبدیلی کے لئے اپنا کردار ادا کریں ، بڑی بڑی ایئرکنڈیشنڈ گاڑیوں سے اترکر عام لوگوں کے مسائل کو حل کریں اپنے بنگلوں اور کوٹھیوں کے دروازے لوگوں کے لئے کھول دیں۔اپنے حلقے کے عوام کو ہر وقت منتخب نمائندہ دستیاب ہو اور عوامی مسائل کو حل کرنے کے لئے اپنی تمام تر توانائیاں بروئے کار لائیں اسی طرح عام آدمی کے مسائل حل ہونگے اور جمہوری نظام پر قوم کا اعتماد بحال ہو گا ۔

قائد محمد نواز شریف نے مرتضیٰ جاوید عباسی کو مسلم لیگ (ن) خیبر پختونخوا کا جنرل سیکرٹری نامزد کیا ہے ۔اس فیصلے سے صوبے سمیت فاٹا میں لیگی کارکنوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی کیونکہ ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کے ساتھ پہلے مسلم لیگ (ن) کا تنظیمی عہدہ نہیں تھا، لیکن اس کے باوجود بھی پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد ان کے دفتر میں صوبے سمیت فاٹا کے لیگی کارکنوں اور عام لوگوں کا اجتماع ہو تاتھا جمعرات کے دن اپنے دفتر میں پبلک ڈے کا انعقاد کرتے تھے ہر کسی کے ساتھ بہت خوش اسلوبی کے ساتھ ملتا تھا اور عوامی مسائل پر موقع پر احکامات جاری کرتے تھے، مرتضیٰ جاوید عباسی کی اہم خصوصیت یہ ہے کہ کسی کو جانتا بھی نہ ہو۔ ان کے دفتر کے دروازے بھی ان کے لئے کھلے ہوتے ہیں اور ملاقات بھی کرتا ہے اور ان کا کام بھی کرتا ہے ۔مرتضیٰ جاوید عباسی کی بحیثیت جنرل سیکرٹری خیبر پختونخوا نامزدگی کے بعد صوبہ اور فاٹا میں مسلم لیگ (ن) بڑی قوت بن کر ابھرے گی، کیونکہ ان کا کاکنوں کے ساتھ قریبی رابطہ رہتا ہے اور کارکنوں کو مایوس نہیں کرتے۔

مزید : کالم

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...