عید پر 25 فیصد کھالوں کے ضیاع سے 1.5 ارب روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑتا ہے، اعظم ملک

عید پر 25 فیصد کھالوں کے ضیاع سے 1.5 ارب روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑتا ہے، اعظم ...

اسلام آباد (اے پی پی) بجلی کی قلت، گرم موسم اور معلومات کی کمی کے باعث ہر سال عید قرباں کے موقع پر قربان کئے گئے جانوروں کی 25 فیصد کھالیں ضائع ہو جاتی ہیں جس سے صنعتکاروں اور کھالوں کے کاروبار سے وابستہ افراد کو 1.5 ارب روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑتا ہے۔ پاکستان ٹینرز ایسوسی ایشن (پی ٹی اے) کے ریجنل چیئرمین اعظم ملک نے کہا ہے کہ کھالوں کے ضیاع سے شعبہ کو براہ راست 1.5 ارب روپے کا نقصان پہنچتا ہے جبکہ معلومات کی کمی اور عدم آگاہی کے نتیجے میں مزید 400 ملین روپے کا نقصان پہنچتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رواں سال حکومت، غیرسرکاری اداروں اور رفاہی تنظیموں کی جانب سے کھالوں کو محفوظ بنانے کے حوالے سے معلوماتی لٹریچر کی فراہمی کے اقدامات قابل تعریف ہیں جس سے چمڑے کی صنعت اور کاروبار سے وابستہ افراد کے نقصانات کو کم کیا جا سکے گا اور صنعتوں کیلئے زیادہ سے زیادہ خام مال کی فراہمی ہو سکے گی جس کے باعث چمڑے کی مصنوعات کی برآمدات میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ چمڑے کی صنعت کو گیس اور سستی بجلی کی فراہمی سمیت بنیادی ڈھانچہ کی دیگر ضروریات کی فراہمی کیلئے بھی جامع اقدامات کی ضرورت ہے۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...