میو ہسپتال ، گریڈ 1سے 17تک نئی بھرتی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

میو ہسپتال ، گریڈ 1سے 17تک نئی بھرتی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

لاہور(جاوید اقبال)میو ہسپتال میں گریڈ 1 سے17 تک کی اسامیوں پر بھرتی کے لیے ریکروٹمنٹ پالیسی کا اعلان کر دیا گیا ہے۔جس کے تحت اعلان کردہ اسامیوں پر ملازمین کے بچوں کے بیس فیصد کوٹہ پر نئی پالیسی سامنے لائی گئی ہے جس کے مطابق ایسے ملازمین جن کی مدت ملازمت ایک سال باقی ہے ان کے بچوں کو اس کوٹے میں ملازمت دی جائے گی۔ایک سال سے زائد سال جن کی ملازمت کا عرصہ باقی ہے ان کے بچے اس کوٹہ میں ملازمت کے حقدار نہیں ہوں گے۔ان کے لیے ملازمت کے لیے اوپن میرٹ پالیسی رائج ہو گی۔ایک سے گریڈ گیارہ تک ملازمین کے بچے کوٹہ کی ملازمت کے حقدار ہوں گے۔ٹیکنیکل اور گریڈ سترہ کی پوسٹ کے لیے ملازمت کا کوٹہ نہیں ہو گا ان پوسٹوں پر اوپن میرٹ پر بھرتی ہو گی۔اس کی تصدیق ہسپتال کے میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈاکٹر طاہر خلیل نے کی ہے۔بتایا گیا ہے کہ میو ہسپتال میں گریڈ ایک سے سترہ تک32 کیٹگریز میں پانچ سو بیس پوسٹیں تشہیر کی گئی تھیں جن پر چوہتر ہزار سات سو بانوے امیدوار امنے آ گئے ہیں اور انہوں نے مختلف عہدوں کے لیے ملازمت کے حصول کے لیے درخواستیں جمع کروائی ہیں۔اتنی بڑی تعداد میں درخواستیں سامنے آ جانے پر ہسپتال کی انتظامیہ سر پکڑ کے بیٹھ گئی ہے سب سے زیادہ درخواستیں گریڈ دو کی پوسٹ وارڈ بوائے کے لیے سامنے آئی ہیں۔ایک سو اسی وارڈ بوائے کی اسامیوں کے لیے چوبیس ہزار سات سو چونتیس امیدواروں نے درخواستیں دی ہیں جبکہ ان اسامیوں پر بیس فیصد کوٹہ ملازمین کے بچوں کے لیے مختص ہے جس کے لیے ہسپتال انتظامیہ نے پالیسی وضح کر دی ہے اس پر ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر طاہر خلیل سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ بھرتی خاصتاً حکومت پنجاب کے اوپن میرٹ پر ہو گی تاہم ملازمت کے حصول کے لیے جن امیدواروں نے بیس فیصد ہسپتال کے ملازمین کے بچوں نے اپلائی کیا ہے ان کے لیے پالیسی وضح کر دی گئی ہے اور اسی پالیسی کے تحت انہیں ملازمت دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ کوٹہ سے اپنے بچوں کو ملازمت دلانے کے خواہشمند ملازمین میں سے ان ملازمین کے بچوں کا زیادہ حق ہے جو آئندہ ایک سال میں ریٹائرڈ ہو جائیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1