پاکستانی نوجوان نے معذور والدہ کو حج کرانے کا مقابلہ اپنے نام کر لیا

پاکستانی نوجوان نے معذور والدہ کو حج کرانے کا مقابلہ اپنے نام کر لیا

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستانی نوجوان اپنے بقیہ پانچ بھائیوں کے مقابلے میں کامیاب ہو کر والدہ کو حج کرانے کی سعادت کا حق دار ٹھہرا۔عربی روزنامے "الیوم" کے مطابق پاکستانی نوجوان نقیب صائب اور اس کے چار بھائی تقریبا دس برسوں سے رقم جمع کرنے میں مصروف تھے تا کہ اپنی معذور والدہ کو حج کرانے کی عظیم نیکی انجام دے سکیں۔نقیب کا کہنا ہے کہ " ہم چھ بھائیوں نے اپنے طور پر دس برس کے قریب مختلف پیشوں کے ذریعے معقول رقم جمع کرنے کی بھرپور کوشش کی تا کہ اپنی والدہ کا فریضہ حج کی ادائیگی کا خواب پورا کر سکیں۔ میں اللہ تعالی کا شکر ادا کرتا ہوں کہ میں سب سے پہلے حج کے سفر کے لیے مطلوب رقم پوری کرنے میں کامیاب ہوا جو کہ 10 ہزار ڈالر کے قریب بنتی ہے۔ اس طرح میرا والدہ کے ساتھ حجازِ مقدّس آنا ممکن ہوا"۔نقیب کے مطابق سعودی عرب آنے کا سفر سہولت کے ساتھ مکمل ہوا۔ ماں بیٹوں نے اپنے دورے کا آغاز مدینہ منورہ سے کیا اور پھر مکہ مکرمہ آ گئے

۔ نقیب کا کہنا ہے کہ اس کی والدہ حرمِ مکی میں داخل ہوتے ہوئے یہاں کی تعمیراتی شان و شوکت دیکھ کر مبہوت رہ گئیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4