بین الاقوامی ریٹنگ اداروں نے پاکستان کی معاشی ترقی کا اعتراف کر لیا : وزیر اعظم

بین الاقوامی ریٹنگ اداروں نے پاکستان کی معاشی ترقی کا اعتراف کر لیا : وزیر ...

اسلام آباد(آن لائن) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ممتاز بین الاقوامی ریٹنگ اداروں نے اندرونی و بیرونی چیلنجز کے باوجود پاکستان کی معاشی ترقی کا اعتراف کیا ہے۔ انہوں نے یہ بات گزشتہ روز وفاقی کابینہ کا اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی جو وزیراعظم آفس میں منعقد ہوا۔ سیکرٹری خزانہ نے کابینہ کو کلیدی اقتصادی اشاریوں، معاشی اقتصادی نمو، صارف قیمت اشاریہ، قرضہ جات کی صورتحال، مالیاتی استحکام، ایف بی آر کی طرف سے ٹیکس وصولی، افرادی قوت کی طرف سے ترسیلات زر، براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری، غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر، ادائیگیوں کے توازن، سرکاری قرضہ اور پاکستان کی معیشت میں نمایاں پیش ہائے رفت سمیت ملک کی مجموعی معاشی صورتحال کے بارے میں بریفنگ دی۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ مالی سال 2016-17 کے دوران جی ڈی پی کی شرح 5.3 فیصد ریکارڈ کی گئی، لارج سکیل مینوفیکچرنگ نے 5.6 فیصد کی شرح نمو حاصل کی، فی کس آمدن مالی سال 2012-13ء میں 1334 ڈالر سے بڑھ کر 1629 ڈالر ہو گئی۔ ترسیلات زر بڑھ کر 19.3 بلین ڈالر ہو گئیں۔ ایف بی آر نے 3362 ارب روپے اکٹھے کئے، مالیاتی خسارہ جی ڈی پی کے لحاظ سے 5.8 فیصد کی سطح پر نیچے لایا گیا، 8286 نئی کمپنیاں رجسٹرڈ ہوئیں، غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر بڑھ کر 21.4 ارب ڈالر ہو گئے جبکہ مالی سال 2016-17 کے دوران براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری بڑھ کر 2.4 ارب ڈالر ہو گئی۔ کابینہ نے 2013ء کے بعد سے مثبت اقتصادی بحالی کے لئے وزیر خزانہ اور فنانس ڈویژن کی انتھک کاوشوں کو سراہا۔ وزیراعظم نے کہا کہ معروف بین الاقوامی ریٹنگ اداروں نے اندرونی و بیرونی چیلنجز کے باوجود پاکستان کی اقتصادی نمو میں اضافہ کا اعتراف کیا ہے۔ وفاقی کابینہ نے ایس ڈی جیز کے حصول کے لئے وزیراعظم کے پروگرام کے راہنما اصولوں میں ترامیم کی منظوری دی۔ کابینہ نے نئی وفاقی وزارتوں/ڈویژنز کی تشکیل نو اور تخلیق کے بعد رولز آف بزنس 1973 میں ترامیم کی بھی منظوری دی۔ جس کا مقصد ان وزارتوں اور ڈویژنز کیلئے سہولت پیدا کرنا اور وقف کردہ موضوعات کو واضح کرنا ہے۔

وزیراعظم/کابینہ اجلاس

اسلام آباد (این این آئی) قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹو کمیٹی (ایکنک) نے مختلف ترقیاتی منصوبوں کی منظوری دیدی ۔ ایکنک کا اجلاس گزشتہ روزوزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں وزراء اور سینئر حکام نے شرکت کی ۔ وزیراعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق ایکنک نے سکھر الیکٹرک پاور کمپنی (سیپکو) کی طرف سے نئے 132 کے وی گرڈ اسٹیشن اور ٹرانسمیشن لائن منصوبے کی تعمیر، سیپکو کے بجلی کی تقسیم کے منصوبے اور توانائی لاسز میں کمی کے منصوبے کی بھی منظوری دی۔ اجلاس میں وزیراعظم کے قومی صحت پروگرام پر نظرثانی کی بھی منظوری دی گئی۔ ایکنک نے چترال، گرم چشمہ، دوراہا روڈ منصوبے کی تعمیر، پرانی بنوں سڑک کو دو رویہ اور بہتر کرنے کے منصوبے، پنڈی گھیب کوہاٹ روڈ کو دو رویہ اور بہتر بنانے کے منصوبے کی بھی منظوری دی گئی۔ ایکنک نے لاہور سیالکوٹ موٹر وے کی تعمیر کی فنانسنگ کے طریقہ ہائے کار میں تبدیلی کی بھی منظوری دی۔ اس کے علاوہ باران ڈیم منصوبے میں توسیع کی بھی منظوری دی گئی۔

ایکنک/اجلاس

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...