ہوشربامہنگائی ‘ متوسط طبقہ کیلئے اجتماعی قربانی کا فریضہ بھی ممکن نہ رہا

ہوشربامہنگائی ‘ متوسط طبقہ کیلئے اجتماعی قربانی کا فریضہ بھی ممکن نہ رہا

ملتان(جنرل رپورٹر)غریب اور متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد کے لئے قربانی کا فریضہ مشکل ہوگیا۔ رواں سال مہنگائی کے باعث پورے ایک ماہ کی تنخواہ میں بھی گائے کا حصہ تک (بقیہ نمبر11صفحہ12پر )

نہیں رکھا جارہا جس کی وجہ سے لوگوں کی بڑی تعداد میں مایوسی پھیل گئی ہے آج سے پانچ سال قبل گائے میں حصہ6ہزار سے آٹھ ہزار تک ہوتا تھا جو اب بڑھ کر11ہزار سے15ہزار تک جا پہنچا ہے مہنگائی میں100فیصد اضافہ ہونے کے باوجود تنخواہوں میں اضافہ صرف چند سو روپے کیا جاتا ہے عمومی طور پر تنخواہوں اور ذرائع آمدن میں بھی مایوس کن فرق پایا جاتا ہے ۔ذرائع آمدن محدود ہیں جبکہ اخراجات میں مسلسل اضافہ ہوتا جاتا ہے ۔بکرو ں کی قربانی تو عام آدمی کے لئے کئی سال قبل ہی ناممکن ہوگئی تھی اب گائے‘ اونٹ کی قربانی میں بھی حصہ ڈالنا مشکل ہو گیا ہے ۔سرکاری طور پر اوسط تنخواہ15ہزار ہونے کے باعث لوگوں کے لئے 15ہزار روپے کا حصہ لینا بہت مشکل ہوگیا ہے کیونکہ تمام اخراجات کنٹرول کرنے کے بعد بھی پوری تنخواہ بچانا ناممکن ہوتا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر