70سالوں سے وسیب کا استحصال ہورہا ہے،غلا م فرید کوریجہ

70سالوں سے وسیب کا استحصال ہورہا ہے،غلا م فرید کوریجہ

ملتان(جنرل رپورٹر)جب تک وفاق متوازن نہ ہوگا ، مسئلے حل نہیں ہونگے ۔ 70 سالوں سے سرائیکی وسیب کا استحصال ہوتا آ رہا ہے ۔اب ظلم برداشت نہیں کریں گے۔ ان خیالات (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

کا اظہار سرائیکی رہنمان ے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جھوک سرائیکستان میں منعقد ہونے والے سیمینار بعنوان ’’ سرائیکی صوبے دا قیام ‘ پاکستان دا استحکام ‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ غلام فرید کوریجہ ‘ ظہور دھریجہ ‘ رانا محمد فراز نون ، ملک اللہ نواز وینس ‘ ملک خضر حیات ڈیال ‘ نذیر کٹپال ‘ سید مہدی الحسن شاہ ‘ عابدہ بخاری ‘ مہر مظہر عباس کات ‘ خواجہ عبید الرحمن ‘ مطلوب شاہ بخاری ‘ ملک گلزار اُترا ‘ مظہر سعید گوپانگ ‘ عاشق صدقانی ‘ جام ایم ڈی گانگا‘ صفدر دیروی ‘ ملک ذیشان لاکھا ‘ ملک احمد نوازآف ڈی آئی خان ‘ عنایت اللہ مشرقی ‘ عبدالباری جعفری ‘ ذکاء اللہ انجم ملغانی ‘ رانا نعمان نون ‘ عبدالقادر ڈاہا ، جام اظہر مراد ، مقصود کھوکھر ، رئیس حکیم چاچڑ اور دوسروں نے کہا کہ سرائیکی وسی کو جرم ضعیفی کی سزا مل رہی ہے ۔صدر ‘ وزیراعظم‘ سپیکر ‘ چیئرمین سینیٹ سمیت کسی بھی عہدیدار کا تعلق سرائیکی وسیب سے نہیں ۔ فوج ، عدلیہ اوربیوروکریسی میں وسیب کی نمائندگی آٹے میں نمک برابر ہے اور مردم شماری میں سرائیکی وسیب کو رگڑا لگا دیا گیا ہے۔ اس لئے ہم نے اپنی گزشتہ روز کی پریس کانفرنس میں مردم شماری کے نتائج کو مسترد کر دیا ہے ۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ سرائیکی صوبے کے قیام سے وفاق متوازن اور مستحکم ہوگا اور سرائیکی صوبہ سرائیکی وسیب کے کروڑوں افراد کے ساتھ ساتھ سندھ ‘ خیبرپختونخواہ اور بلوچستان کی بھی ضرورت ہے کہ پنجاب کے بڑے حجم کی وجہ سے تمام صوبے اس سے نالاں ہیں ۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ نواز شریف کو سرائیکی وسیب کی بد دعائیں لے ڈوبیں۔ تمام قیادت نا اہل ہونے کے لائق ہے ن لیگ نے پنجاب اسمبلی سے قرارداد پاس کرائی ‘ اپنے منشور میں دو صوبوں کا وعدہ کیا اور مگر چار سال گزرنے کے باوجود یہ ٹس سے مس نہیں ہورہے ۔ ان پر دفعہ 62,63 لاگو ہونی چاہئے ۔سرائیکی صوبے کو حاصل ہونے والی این ایف سی ایوارڈ کی رقم سے چولستان میں پانچ لاکھ ایکڑ پر مشتمل دنیا کی بڑی یونیورسٹی قائم ہو سکے گی جہاں ایک سو کے لگ بھگ ذیلی ادارے ‘ کالج اور انسٹیٹیوٹ کام کریں گے اور پوری دنیا سے لوگ یہاں تعلیم حاصل کرنے آئیں گے ۔ سیمینار میں کہا گیا کہ سرائیکی وسیب میں زمینوں کی لوٹ مار بند کی جائے ۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ 10 ستمبر کو سرائیکستان لانگ مارچ میں ان تمام مسائل پر کھل کر بات ہوگی بہاؤ الدین یونیورسٹی ملتان کی فیسوں میں بے تحاشہ اضافے پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...