کرک بازار میں سرکاری نرخنامہ آویزاں نہ کرنے پر قصاب کو جرمانہ کیا گیا

کرک بازار میں سرکاری نرخنامہ آویزاں نہ کرنے پر قصاب کو جرمانہ کیا گیا

کرک (بیورورپورٹ)کرک بازار میں سرکاری نرخنامہ آویزاں نہ کرنے پر قصاب کو جرمانہ کیا گیا قصاب نے حکومتی رٹ کو چیلنج کرتے ہوئے جرمانہ نہ بھرنے اور سرکاری عملے کو سنگین نتائج بھگتنے کی دھمکیاں دی گئی۔ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر عابد خان آفریدی نے میڈیا نمائندگان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ AAC2کرک سہیل رحمان معہ لیوی اہلکاران اور پولیس نفری کے ہمراہ کرک بازار میں دکانداروں کیلئے جاری کردہ سرکاری نرخنامے اور اشیاء خوردونوش کی چیکنگ کرتے ہوئے الگڈی روڈ پر واقع قصاب خانہ میں جاری کردہ سرکاری نرخنامہ آویزاں نہ کرنے پر AAC2کرک نے قصاب رسول بادشاہ ولد رائے بت خان سکنہ کندہ کرک کو 1000روپے جرمانہ کیا گیا ۔ جس پر قصاب نے تیش میں آکر حکومتی رٹ کو چیلنج کرتے ہوئے جرمانہ نہ بھرنے اور AAC2کرک اور دیگر سرکاری عملے کے اہلکاروں کو گالی گلوچ دیتے ہوئے دوبارہ قصاب خانے نہ آنے کی دھمکی اور انتہائی نا زیبا الفاظ استعمال کرتے ہوئے آفسران کو سنگین نتائج بھگتنے کی دھمکیاں دیتے ہوئے سرکاری عملے کے ساتھ ہاتھ پائی پر اتر آیا جس پر پولیس نے قصائی کو گرفتار کرنے کی کوشش کی تو قصاب رسول بادشاہ نے گرفتار ی سے بچنے کیلئے اپنے کپڑے پھاڑ دیئے اور پولیس پر الزام عائد کیا کہ پولیس کو مفت گوشت نہ دینے پر پولیس نے تشدد کیا ۔ ڈی ایس پی عابد خان آفریدی نے قصاب کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ قصاب کی طرف سے پولیس پر لگائے گئے الزامات من گھڑت اور بے بنیاد ہے ۔قصاب کی کارسرکار میں مداخلت اور رکاوٹ پر تھانہ کرک میںACکی مدعیت میں قصاب رسول بادشاہ کے خلاف تعزیرات پاکستان کے دفعات 506/186/189کے تحت مقدمہ درج رجسٹر کیا گیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر