ملک دشمن عناصر کیخلاف عوام اور حکومت دست و بازو ہیں:محمود اسلم وزیر

ملک دشمن عناصر کیخلاف عوام اور حکومت دست و بازو ہیں:محمود اسلم وزیر

مہمند ایجنسی (نمائندہ پاکستان ) مہمند ایجنسی میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سیکورٹی فورسز ، خاصہ دار ولیویز،قومی مشران اور عوام کی قربانیاں رائیگا نہیں جائینگے۔ ملک دشمن عناصر کے خلاف عوام اور حکومت دست و بازو ہیں۔ قوم آپس کے اختلافات ختم کر کے اجتماعی طور پر امن و امان کی بحالی میں اپنا کردار ادا کرتے رہے۔ وزیرستان کی طرح مہمند ایجنسی میں بھی پاک فوج کے زیر نگرانی ترقیاتی منصوبے شروع کئے جائینگے۔ پولیٹیکل انتظامیہ اور سیکورٹی فورسز رسم و رواج کے مطابق قبائلی مشران کو مشاورت میں شامل رکھیں گے۔ ان خیالات کا اظہار مہمند ایجنسی کے پولیٹیکل ایجنٹ محمود اسلم وزیر اور کمانڈنٹ مہمند رائفلز محمد عرفان علی نے منگل کے روز غلنئی جرگہ ہال میں قبائلی مشران کے ساتھ منعقدہ مشاورتی گرینڈ جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جرگہ میں اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹس نوید اکبر خان ، حمید اللہ خٹک، تحصیلداران سیکورٹی فورسز حکام اور سینکڑوں کی تعداد میں تمام اقوام کے سرکردہ مشران نے شرکت کی۔ جرگے سے خطاب کرتے ہوئے پی اے مہمند محمود اسلم وزیر اور کمانڈنٹ مہمند رائفلز محمد عرفان علی نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مہمند ایجنسی کے عوام اور قبائلی مشران نے ثابت قدمی کا مثالی مظاہرہ کیا ہے۔ مہمند ایجنسی میں دہشت گردی اور شرپسندی کے خاتمے کیلئے سیکورٹی فورسز ، لیویز اور خاصہ دار فورس کے جوانوں کے علاوہ قبائلی مشران اور عوام نے جانی قربانیاں دی ہے جو کبھی رائیگا نہیں جانے دینگے۔ ان قربانیوں اور حب الوطنی کے بدولت ہر سال گزرنے کے ساتھ امن قائم ہو رہا ہے۔ اور امن کی جانب سفر تیزی سے جاری ہے۔ قبائلی مشران اور عوام پولیٹیکل انتظامیہ اور سیکورٹی اداروں کے ساتھ مل کر چوری چھپے تخریب کاری کرنے والوں کا رستہ روکنے میں بھر پور ساتھ دے۔ اور شرپسند عناصر کے مذموم مقاصد کو ناکام بنا کر مہمند ایجنسی کو امن اور ترقی کا گہوارہ بنائے۔ انہوں نے کہا کہ قبائلی مشران ہمارا قیمتی سرمایہ ہے۔ امن و امان کے ساتھ ساتھ تعمیر و ترقی اور اہم معاملات میں ان کی رائے شامل کی جائیگی۔ کیونکہ مہمند ایجنسی واحد ایجنسی ہے جہاں پر دہشت گردی کی سرکوبی کیلئے بڑے بڑے آپریشن نہیں کرنے پڑے اور یہاں کے قبائلی مشران نے علاقے سے ہجرت نہ کر کے حالات کا بھر پور مقابلہ کیا ہے۔ قومی مشران کی طرف سے ملک صاحب داد حلیمزئی، ملک صاحب خان اتمانخیل، ملک نادر منان بائیزئی، ملک سلطان منذری چینہ اور ملک سلیم سردار نے خطاب کرتے ہوئے نئے کمانڈنٹ مہمند رائفلز کرنل محمد عرفان علی کی تعیناتی کا خیر مقدم کرتے ہوئے حکومت کے ساتھ بھر پور تعاؤن کا یقین دلایا۔ انہوں نے پولیٹیکل انتظامیہ اور سیکورٹی حکام کو علاقائی مسائل کے بارے میں آگاہ کیا اور اُمید ظاہر کی کہ وزیرستان کی طرح مہمند ایجنسی میں بھی پاک فوج کے زیر نگرانی میگا پراجیکٹس شروع کر کے بنیادی ضروریات کی فراہمی یقینی بنائے جائے۔ کمانڈنٹ مہمند رائفلز کرنل محمد عرفان علی نے جرگے کے آخر میں مہمند ایجنسی میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے شہداء کے ایصال ثواب کیلئے خصوصی دعا مانگی اور قوم کو یقین دلایا کہ حالات مزید بہتر ہونے پر بتدریج موبائل نیٹ ورک کھولا جائیگا اور موٹر سائیکل پر سے پابندی بھی اُٹھائی جائیگی۔

 

مزید : پشاورصفحہ آخر