جنوبی اضلاع کیلئے میگا پراجیکٹس سے علاقے میں معاشی انقلاب برپا ہونے والا ہے :اکرم خان درانی

جنوبی اضلاع کیلئے میگا پراجیکٹس سے علاقے میں معاشی انقلاب برپا ہونے والا ہے ...

پشاور( سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے ہاوسنگ اینڈ ورکس اکرم خان درانی نے بنوں ڈومیل تا رنگین آباد روڈ کی دو رویہ تعمیر کے منصوبے کیلئے 18 ارب روپے، کوہاٹ تا کرک اور لکی مروت روڈ کی تعمیر کیلئے 30 ارب روپے اور بار ان ڈیم کی ریزنگ کیلئے 5 ارب 20 کروڑ روپے کی منظوری پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا شکریہ ادا کیا ہے۔وفاقی وزیر نے سابق وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کا بھی بطور خاص شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان تمام منصوبوں کا وعدہ اور اعلان کیا تھا ۔وفاقی وزیر نے اپنے بیان میں بنوں، کوہاٹ، ٹیری، ڈیرہ اسماعیل خان، شمالی وزیرستان، ٹانک، جنوی وزیرستان،کرک لکی مروت اور ملحقہ علاقے کے عوام کو اس عظیم کام پر مبارکباد دی۔ اکرم خان درانی نے کہا کہ حکومت نے ان علاقوں کے لوگوں سے کیا ہوا وعدہ پورا کرلیا ہے، عنقریب اس علاقے میں معاشی انقلاب برپا ہونے والا ہے اور ان روڈ ز کی تعمیر سے نہ صرف روزگار کے وافر مواقع میسر آئیں گے بلکہ ان علاقوں کے مابین اور ملک کے دوسرے علاقوں سے رابطہ بھی مزید مربوط ہوگا، انشائاللہ سی پیک کے روٹ کے ساتھ ساتھ ان علاقوں کے لوگوں کو ہر طرح کو سہولت اور مواقع بھی میسر آئیں گے۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ ان روڈز کے ٹینڈرزجاری ہوگئے ہیں ورک آرڈر جاری ہو چکے ہیں اور عنقریب ان پر کام بھی شروع ہو جائے گا ہ ایکنک کی منظوری آج ہوگئی اور مہینے کے اندر کام شروع ہوگا۔ اور باران ڈیم کیلئے کنٹریکٹر کی پری کوالیفیکیشن کیلئے اخبار میں اشتہار آچکا ہے اور بہت جلد ان پر بھی کام شروع ہو جائے گا۔انہوں نے کہاکہ اس کے علاوہ کرم گڑھی کیلئے بھی 1ارب اور 15کروڑ منظور ہو چکے ہیں جن سے ان علاقوں کو مزید فائیدہ ہوگا۔وفاقی وزیرنے کہا کہ بار ان ڈیم کی رائیزنگ سے بنوں اور لکی مروت کی ہزاروں ایکڑ زمین سیراب ہوگی اور اپنے ساتھ خوشحالی لائے گی، بار ان ڈیم میں پانی ذخیرہ کرنے کی استعداد صرف 25 فیصد رہ گئی تھا جواضافے کے بعد 100 فیصد ہو جائے گا اور جس سے جانی خیل، بنوں اور لکی مروت کے ہزاروں ایکڑ زمین سیراب ہوگی۔انہوں نے کہاکہ کرم گڑھی پاور ہاوس کی اپ گریڈیشن کے بارے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس پر کسی نے بھی توجہ نہیں دی تھی اور 1952 میں تعمیر کے بعد اس پاور ہاوس کی صلاحیت کم ہو کر 1 میگاواٹ سے بھی کم ہو گئی تھی تاہم ہماری کوششوں سے اب یہ 8 میگاواٹ ہو جائے گئی۔اکرم خان درانی نے کہا کہ پتہ نہیں تبدیلی کیا ہے اور کون کس طرح کی تبدیلی لا رہا ہے مگر ان کی اور ان کی پارٹی کو کوششوں سے صوبہ خیبر پختونخوا کے جنوبی اضلاع میں تبدیلی آ بھی گئی ہے اور جوں جوں وقت گزر رہا ہے عوام کی فلاح وبہبود کے مزید کام ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انشاء اللہ عنقریب مزید ترقی کے مراحل طے کرتے ہوئے ہم پورے صوبے کیئے وہ کام کریں گے جن کی نظیر ملنی مشکل ہو گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر