ڈی جی آرڈی اے نے غیرقانونی ہاؤسنگ سوسائٹی کااین اوسی روک دیا

ڈی جی آرڈی اے نے غیرقانونی ہاؤسنگ سوسائٹی کااین اوسی روک دیا

راولپنڈی(جنرل رپورٹر) ڈی جی آر ڈی اے نے کیپٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی کی انتظامیہ کا بڑا سکینڈل سامنے آنے سے قبل ہی عوام کے اربوں روپے لٹنے سے بچا کر مذکورہ سوسائٹی کا این او سی روک دیا، سوسائٹی کی کمپنی فیوچر ان کمپنی نے ایک شہری کی زمین کو اپنی ملکیت ظاہر کر کے این او سی کے حصول کیلئے درخواست دی تھی تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر جنرل آرڈی اے کو فیوچران کمپنی کی طرف سے چکری روڈ موضع چہان میں کیپٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی قائم کرنے کیلئے درخواست جمع کروائی تھی کہ موضع چہان مندوال اور چھچھ کے علاقے میں ہزاروں کنال زمین پر ہاؤسنگ سوسائٹی قائم کرنا چاہتی ہے اور اس کا این او سی جاری کرانے کیلئے موضع چہان کے اراضی خسرہ جات950،913اور دیگر خسرہ جات کا جو حوالہ دیا ہے وہ اس سوسائٹی کی ملکیت نہیں ہے یہ انکشاف اس وقت ہوا جب ایک شہری نے ڈی جی آرڈی اے کو درخواست جمع کراتے ہوئے واضع کیا کہ کیپیٹل سمارٹ سٹی کا این او سی فوری طور پر روکا جائے کیونکہ موضع کے جن خسرہ جات کا حوالہ دیا گیا وہ میری ملکیت ہے جس پر پچھلے 14سال سے قابض و مالک ہے شہری کی اس درخواست کے بعد مذکورہ ہاؤسنگ سوسائٹی کی انتظامیہ نے محکمہ مال راولپبڈی سے ملی بھگت کر کے موضع چہان کی سینکڑوں کنال اراضی کی ملکیت اور کمپیکٹ پیس کیپیٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی نے کلیئرنس حاصل کر کے محکمہ مال کا ریکارڈ آرڈی اے کے پاس جمع کرا دیا جس پر شہری کو معلوم ہوا کہ اس نے اب دوبارہ درخواست جمع کرائی ہے کہ مذکورہ سوسائٹی نے جس جگہ پر سوسائٹی کا این او سی حاصل کرنا چاہتی ہے وہ فیوچران کی ملکیت نہیں بلکہ میری ملکیت ہے جو کہ پچھلے14سال سے زائد عرصہ سے مالک اور قابض ہیں اس درخواست کے بعد مذکورہ کمپنی نے محکمہ مال راولپنڈی سے ساز باز کر کے کلیئرنس حاصل کی کہ کپیٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی کے پاس سینکڑوں کنال جگہ ایک پیس (Compect) نہ ہے جبکہ اراضی فیوچران کی ملکیت بھی نہ ہے اور نہ ہی ایک پیس میں ہے شہری نے اپنی درخواست میں واضع کیا ہے کہ کیپیٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی نے میری ملکیت اراضی آرڈی اے میں اپنی ملکیت ظاہر کر کے این او سی حاصل کرنا چاہتی جو کہ سر اسر غیر قانونی ہے اور جعل سازی ہے اس درخواست پر ڈی جی آر ڈی اے نے فوری احکامات جاری کرتے ہوئے کیپیٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی کا این او سی روک دیا ہے ادھر معلوم ہوا ہے کہ انتظامیہ نے ویب سائیڈ بنا کر اس پر بھی سوسائٹی کا نقشہ جاری کر رکھا ہے ادھر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ مذکورہ ہاؤسنگ سوسائٹی جن نے جس اراضی کا لے آؤٹ پلان دیا ہے وہ اس اراضی کی مالک نہ ہے جعل سازی سے آر ڈی اے سے این او سی حاصل کر کے شہریوں کوپلاٹ کاغذی نقشہ جات اور ایڈورٹائزمنٹ کر کے لوگوں سے اربوں روپے کمانا چاہتے ہیں ادھر آرڈی اے نے کیپیٹل سمارٹ سٹی ہاؤسنگ سوسائٹی موضع چہان راولپنڈی کا این او سی شہری کی درخواست پر روک دیا ہے۔

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...