الیکشن کمیشن کو مردم شماری کا ڈیٹا ابھی تک فراہم نہیں کیا گیا،سردارمظہرحسین

الیکشن کمیشن کو مردم شماری کا ڈیٹا ابھی تک فراہم نہیں کیا گیا،سردارمظہرحسین

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر) ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر سردار مظہر حسین نے منگل کے روز بتایا کہ الیکشن کمیشن کو مردم شماری کا ڈیٹا ابھی تک فراہم نہیں کیا گیا، نئی حلقہ بندیوں کیلئے 6ماہ کی ضرورت ہے لہٰذا 2018کے انتخابات میں نئی حلقہ بندیوں کا امکان کم ہے البتہ حکومت نے فوری ڈیٹا فراہم کر دیا تو نئی حلقہ بندیاں بھی کی جا سکتی ہیں۔ وہ چکوال پریس کلب میں ووٹ کی اہمیت کے حوالے سے منعقد تقریب میں خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر تنظیم پودا کی چیئرپرسن ناہیدہ عباسی، گل نسرین ، چوہدری غلام جیلانی منہاس ایڈووکیٹ بھی موجود تھے۔ سردار مظہر حسین نے مزید کہا کہ نئے ووٹوں کے اندراج کا سلسلہ جاری ہے اور آنے والے انتخابات کے شیڈول کا اعلان ہونے سے قبل تک نئے ووٹوں کا اندراج جاری رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ پی پی23کے ضمنی الیکشن میں قصبہ دھولر اور ڈھرنال میں خواتین کے ووٹ نہ پول ہونے کا چیف الیکشن کمشنر نے از خود نوٹس لے رکھا ہے لہٰذا مقامی این جی او زکی مدد سے ان دونوں دیہاتوں میں ہنگامی بنیادوں پر کام کیا گیا ہے اور بات کا 100فیصد امکان ہے کے آنے والے الیکشن میں ان دونوں دیہاتوں میں خواتین کے ووٹ پول نہ کرنے کی جو خود ساختہ پابندی عائد کی ہوئی ہے وہ ختم ہوگی اور خواتین بھی اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گی۔ سردار مظہر حسین نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان آنے والے عام انتخابات، آزادانہ غیر جانبدرانہ اور منصفانہ کرانے کیلئے ہمہ وقت تیار ہے۔ بہرحال جو بھی اس ضمن میں فیصلہ کیا گیا آنے والے الیکشن انشاء اللہ شفاف ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی فہرستوں کی تیاری اور انتخابی طریقہ کار پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے اور الیکشن کی راہ میں رکاوٹیں ڈالنے والوں کے ساتھ سختی سے نبٹا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع چکوال میں رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد 8لاکھ سے زائد ہے۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ ضلع چکوال کے پولنگ اسٹیشن کمپیوٹرائز کر دیے گئے ہیں۔ بعد ازاں 2018کے عام انتخابات شفاف کرانے کے حوالے سے اظہار یکجہتی کیک بھی کاٹاگیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر