پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک نے فنانس ریویو لانچ کر دیا

پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک نے فنانس ریویو لانچ کر دیا

کراچی(پ ر) پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک کی جانب سے کراچی میں منعقدہ ایک تقریب میں پاکستان مائیکرو فنانس ریویو 2016 لانچ کر دیا گیا ہے۔ مائیکرو فنانس ریویو 2016 بنیادی طور پر مائیکرو فنانس سیکٹر کی فنانشل اور سوشل کارکردگی کے حوالے سے ایک رپورٹ ہے جس میں مائیکرو فنانس مہیا کرنے والے اداروں کا ایک جائزہ پیش کیا گیا ہے۔ یہ رپورٹ یو کے ایڈ کے ڈیپارٹمنٹ برائے بین الاقوامی ترقی کے تعاون سے تیار کی گئی۔ مائیکرو فنانس کو 2016 میں خاصی ترقی حاصل ہوئی جس کی بڑی وجہ دپوزٹ بیس میں بہتری آنا ہے۔ اس بڑھوتری کے نتیجے میں مائیکرو فنانس سیکٹر اب فنانشل انکلوژن ایجنڈا کے حصول کے حواے سے اہم ستون کی حیثیت اختیار کر چکا ہے۔ مائیکرو فنانس ریویو 2016 کی لانچنگ تقریب میں سٹیٹ بنک آف پاکستان، یو کے ایڈ کے ڈیپارٹمنٹ برائے بین الاقوامی ترقی ، پاکستان مائیکرو فنانس انویسٹمنٹ کمپنی، کمرشل بینکس، ڈیجیٹل فنانس کے اداروں، اور مائیکرو فنانس اداروں سے منسلک افراد نے شرکت کی۔ پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک کے چیف ایگزیکٹو آفیسر سید محسن احمد نے ملک میں مائیکرو فنانس کے شعبے میں ہونے والی ترقی اور اس شعبے کو درپیش چیلنجز کے حوالے سے بریفنگ دی ۔ پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک کے چئیرمین اور پلانٹ این کے کوچ، سیدد ندیم حسین کا کہنا تھا کہ مائیکرو فنانس کے شعبے میں ترقی کے احداف حاصل کرنے کے لیے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کی اہمیت کو سمجھنا ضروری ہے۔ پاکستان مائیکرو فنانس انویسٹمنٹ کمپنی کے چیئرمین زبیر سومرو کا کہنا تھا کہ ہم مائیکرو فنانسسیکٹر میں دو سو ارب تک کی سرمایہ کاری کر سکتے ہیں۔ یو کے ایڈ کے ڈیپارٹمنٹ برائے بین الاقوامی کے فنانس ٹیم لیڈر، ڈاکٹر Euan MacMillan کا کہنا تھا کہ وہ مائیکرو فنانس انڈستری کے فروغ کے لیے کام کرتے رہیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ مائیکرو فنانس شعبے کی بدولت غریب مرد و خواتین کی ترقی میں خاصی مدد مل رہی ہے اور اسی وجہ سے یہ شعبہ ڈی ایف آئی ڈی کی اکنامک ڈیولپمنٹ سٹریٹجی کا اہم جزو ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...