امریکی فوج میں خواجہ سراؤں پر پابندی کا صدارتی حکم نامہ عدالت میں چیلنج

امریکی فوج میں خواجہ سراؤں پر پابندی کا صدارتی حکم نامہ عدالت میں چیلنج

واشنگٹن ( آن لائن )شہری حقوق کی تنظیموں نے امریکی فوج میں خواجہ سراؤں پر پابندی کے صدارتی حکم نامے کو عدالت میں چیلنج کردیا۔ایک مقدمہ شہری حقوق کی تنظیم امیریکن سول لبرٹیز نے امریکی فوج میں حاضر سروس چھ خواجہ سراؤں کی جانب سے دائر کیا ہے۔امریکن سول لبرٹیز کا کہنا ہے کہ یہ پابندی امتیازی قانون اور تحفظ میں برابری کے آئینی حق کی خلاف ورزی ہے۔اس پابندی کے خلاف پیر کو دائر کیا گیا ایک دوسرا مقدمہ ایل جی بی ٹی گروپس اور تین خواجہ سرا ء افراد کی جانب سے دائر کیا گیا ۔ ان تین افراد میں سے دو فوج میں بھرتی ہونا چاہتے ہیں اور ایک پہلے ہی سے حاضر سروس ہے۔تحقیق اور ڈویلپمنٹ سے متعلق ادارے رینڈ کارپوریشن کی جانب سے جاری کردہ اندازے کے مطابق گذشتہ برس امریکی فوج میں خواجہ سراؤں کی کل تعداد 4000 تھی تاہم کچھ اندازوں کے مطابق یہ تعداد 10 ہزار سے زیادہ ہے۔

امریکی فوج/خواجہ سراء

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...