ٹرمپ اور جنرل نکلسن کی دھمکیاں ناقابل قبول ، پارلیمنٹ امریکی صدر کے بیان کو مسترد کرتی ہے، قومی اسمبلی میں امریکی پالیسی کے خلاف متفقہ قرار داد منظور

ٹرمپ اور جنرل نکلسن کی دھمکیاں ناقابل قبول ، پارلیمنٹ امریکی صدر کے بیان کو ...

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی اسمبلی کے مشترکہ اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی افغانستان اور جنوبی ایشیا کے حوالے سے نئی پالیسی کو مسترد کرتے ہوئے متفقہ قرارداد منظور کر لی گئی ہے۔ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ اور جنرل نکلسن کے بیان دھمکی آمیز ہیں اور پارلیمنٹ امریکی صدر کے بیان کو مسترد کرتی ہے۔وزیر خارجہ خواجہ آصف کی جانب سے قرارداد اسمبلی میں پیش کی گئی جسے متفقہ طور پر منظور کر لیا ہے۔

بینظیر بھٹو قتل کیس پر وکلا کے دلائل مکمل، انسداد دہشتگردی عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا

وزیر خارجہ خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں امریکی صدر کے الزامات سے متعلق قرار داد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم اس وقت ایک پیج پر ہے اور قومی اسمبلی 21 اگست کی امریکی صدر ٹرمپ کی پالیسی مسترد کرتی ہے۔قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ ایوان کوئٹہ اور پشاور میں طالبان کی موجودگی کا امریکی دعویٰ مسترد کرتا ہے۔اس حوالے سے امریکی صدر اور افغانستان میں امریکی کمانڈر جنرل جان نکلسن کے بیانات دھمکی آمیز ہیں.قرارداد میں کہا گیا کہ پاکستان ذمہ دار ایٹمی قوت ہے جو مؤثر کمانڈ اینڈ کنٹرول نظام رکھتا ہے، دہشت گردی کیخلاف جنگ میں 70 ہزار افراد شہید ہوئے ، پاکستان کو 123 ارب ڈالر کا نقصان ہوا، یہ قربانیاں نظر انداز کی گئیں، مسلح افواج نے جو قربانیاں دیں، جوجنگ کر رہے ہیں امریکا نے اسے بھی نظر اندازکیا۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی فوج، رینجرز اور سیکورٹی ایجنسیز نے بے انتہاءقربانیاں دی ہیں۔ ایوان دہشتگردی کیخلاف سیکیورٹی فورسزکی قربانیوں کااعتراف کرتاہے۔حکومت کے موثر اقدامات کی وجہ سے ملک میں دہشتگردی کم ہوئی۔ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کا مئو ثر کمانڈ اور کنٹرول سسٹم ہے جبکہ افغانستان میں داعش کی موجودگی پاکستان کے لئے انتہائی تشویشناک ہے۔افغان اور اتحادی فورسز افغانستان کی سرزمین کو پاکستان کے خلاف استعمال ہونے سے روکیں ۔ ایوان امریکااورنیٹو سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ بھارت کوافغان سرزمین پاکستا ن کے خلاف  استعمال کرنے سے روکیں۔ایوان خطے میں بھارتی کردار کی حمایت مسترد کرتا ہے کیوں کہ افغانستان میں بھارت کا کردار خطے کے امن کے لئے انتہائی خطرناک ہے۔ بھارت کشمیر کے نہتے شہریوں پر ظلم وستم کر رہا ہے جبکہ وہ مسئلہ کشمیر پر پاکستان سے مذاکرات کرنے کے لئے تیار نہیں ہے۔ کشمیریوں کی اخلاقی اورسفارتی حمایت جاری رکھیں گے۔

مزید : قومی /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...