پاک فضائیہ کا وہ پائلٹ جو پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو تباہ کرنے کیلئے اسرائیل کے ساتھ مل گیا ،آئی ایس آئی کے میجر ریاض نے اسے کس طرح پکڑا اور یہ آپریشن کتنا لمبا چلا؟ایسا حقیقت پر مبنی سیکریٹ آپریشن جسے جان کر آپ اپنی خفیہ ایجنسی پر عش عش کر اٹھیں گے

پاک فضائیہ کا وہ پائلٹ جو پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو تباہ کرنے کیلئے ...
پاک فضائیہ کا وہ پائلٹ جو پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو تباہ کرنے کیلئے اسرائیل کے ساتھ مل گیا ،آئی ایس آئی کے میجر ریاض نے اسے کس طرح پکڑا اور یہ آپریشن کتنا لمبا چلا؟ایسا حقیقت پر مبنی سیکریٹ آپریشن جسے جان کر آپ اپنی خفیہ ایجنسی پر عش عش کر اٹھیں گے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )میجرریٹائرڈ عامرکاشمارآئی ایس آئی کے بہترین افسران میں ہوتاتھاان کاسب سے بڑاکارنامہ 1987میں وطن عزیزکے ایٹمی پروگرام کوبھارت اور اسرائیل کے حملے سے بچاناتھا۔میجرعامراس وقت آئی ایس آئی کے اسلام آبادمیں سٹیشن چیف تھے۔اس وقت اسرائیل کی خفیہ ایجنسی نے پاکستان کے خفیہ راز نکلوانے کیلئے پاک فضائیہ کے ایک بھگوڑے پائلٹ کواس مقصدکے لیے استعمال کیا۔میجرعامرجوجب اس بات کاعلم ہواتوانہوں نے اس کی نگرانی شروع کردی اورسیکرٹ آپریشن لانچ کرنے کا فیصلہ کیا ،انہوں نے اس سے ملاقات میں اسے کہاکہ میں ایک پختون قوم پرست ہوں ان دنوں ناراض پختونوںکی ایک تحریک چل رہی تھی۔میجرعامرنے اسے اپنانام سعیدخان بتایا۔

اسرائیلی ایجنسی نے پاک فضائیہ کے افسرکوبرطانیہ کے ایک ڈانسنگ کلب سے اٹھایااوراسے تل ابیب لے گئے جہاں اس کی برین واشنگ کی۔اوراسے پاکستان میں واپس لایا گیا۔میجرعامرساراواقعہ سناتے ہوئے کہتے ہیں کہ ان دنوں میں ایک کتاب پڑھ رہاتھاجوموسادکے ایک سابق چیف نے لکھی تھی اس کتاب میں ذکرآیاکہ چاڈ میں جب ہم نے آپریشن کیاتوچونکہ وہاں ہماراسفارتخانہ نہیں تھاتوہم نے ارجنٹائن کے سفارتخانے کواستعمال کیا۔میجرعامرنے کہاکہ جب میرے ذہن میں یہ بات آئی کہ ان کاتوپاکستان میں بھی کوئی سفارتخانہ نہیں ہے کہیں وہ یہاں پرتوکوئی ایساکام نہیں کررہے میں نے جب ارجنٹائن کے سفارتخانے سے جواسلام آبادمیں تھا ،معلوم کیاتووہاں دوڈپلومیٹ تھے ایک سفیرتھااوردوسرافرسٹ سیکرٹری تھا۔فرسٹ سیکرٹری کانام لوسٹن تھامیں نے اسے انڈرسرویلنس رکھ لیاایک دن لوسٹن اڈیالہ جیل گیاوہاں سے میں نے معلومات کیں توپتاچلاکہ وہ یہاں پرایک ائیرفورس کے پائلٹ سے ملاتھاجس کورٹ مارشل ہواتھا۔

لوسٹن یہودی تھااورامریکی سفارتخانے میں بطوردفاعی اتاشی بھی کام کرتاتھاایک کڑی مجھے مل گئی جب پائلٹ رہاہوکرجیل سے باہرآیاتومیں نے اس کے پیچھے ایک آدمی کولگادیاجس نے اسے میرے بارے میں بتایاکہ یہ ایک پختون ہے فوج سے ناراض ہے۔میں نے دوسال اس کے ساتھ کام کیااوروطن عزیزکے خلاف اسرائیل اوربھارت کاپلان بے نقاب ہوا۔پھرہم نے بھارت کوپیغام بھیجاکہ ہم تیارہیں جس کے بعدانہوں نے اپناارادہ ترک کردیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس