یہ پولیس والا 10 کلو وزنی بم اپنے کندھے پر اُٹھا کر کیوں بھاگ رہا ہے؟ اصل وجہ جان کر آپ جتنی بھی تعریف کرلیں کم لگے گی

یہ پولیس والا 10 کلو وزنی بم اپنے کندھے پر اُٹھا کر کیوں بھاگ رہا ہے؟ اصل وجہ ...
یہ پولیس والا 10 کلو وزنی بم اپنے کندھے پر اُٹھا کر کیوں بھاگ رہا ہے؟ اصل وجہ جان کر آپ جتنی بھی تعریف کرلیں کم لگے گی

نئی دلی (نیوز ڈیسک) کسی جگہ بم کی موجودگی کا شبہہ بھی ہو تو کون ہے جو وہاں ٹھہرنے کی ہمت کرے گا، لیکن ایک بھارتی پولیس اہلکار نے تو کمال ہی کر دیا۔ وہ لوگوں کی جان بچانے کے لئے بم کو کندھے پر اٹھا کر دوڑ کھڑا ہوا، اور اس وقت تک بھاگتا رہا جب تک یقین نہ ہو گیا کہ وہ بم کو لوگوں سے محفوظ فاصلے پر لے جا چکا تھا۔ 

مزیدپڑھیں:وہ آدمی جس کے پاس دنیا میں سب سے زیادہ فحش فلمیں ہیں، انٹرنیٹ پر ڈالیں تو ایسا کام ہوگیا کہ دنیا کا نظام ہی درہم برہم ہوگیا

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 40 سالہ ابھیشک پٹیل نے ایک سکول کی گراؤنڈ میں پڑے 10 کلو وزنی کو اپنے ہاتھوں میں اٹھایا اور کندھے پر رکھ کر اسے بچوں سے زیادہ زیادہ سے دور لیجانے کیلئے دوڑ لگا دی۔ ریاست مدھیا پردیش کے ساگر ڈسٹرکٹ میں واقع سکول میں تقریباً 400 بچے موجود تھے۔ ابھیشک نے بم اٹھا کر اپنی جان کی پروا کیے بغیر وہاں سے دوڑ لگائی اور تقریباً ایک کلومیٹر دور جا کر اسے ایک نالے میں پھینک دیا۔

سکول کے بچوں نے بم نظر آتے ہی شور مچا دیا تھا لیکن بدقسمتی سے بم سکواڈ فوری طور پر موقع پر نہ پہنچ سکا، جس کے بعد ابھیشک نے بغیر کسی حفاظتی اقدامات کے بم کو اٹھا کر سکول سے دور لے جانے کا فیصلہ کیا۔ بعد ازاں ماہیر ریجمنٹ سنٹر سے آنے والے فوجی اہلکاروں نے بم کو ناکارہ بنایا۔ ابھیشک پٹیل کو اس بہادری پر 50 ہزار بھارتی روپے (تقریباً 1 لاکھ پاکستانی روپے ) کا انعام بھی دیا گیا۔

بعد ازاں اس بہادر شخص نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ’’کیونکہ یہ ایک رہائشی علاقہ تھا اور بم سکول کی گراؤنڈ میں پڑا تھا تو میرے ذہن میں صرف ایک بات تھی کہ اسے بچوں سے زیادہ زیادہ سے دور لے جاؤں۔ یہ ایک طاقت ور بم تھا جو پھٹ جاتا تو نصف میل کے دائرے میں بڑی تباہی برپا کرتا۔ مجھے اندازہ تھا کہ اس کوشش میں میری جان جا سکتی تھی لیکن مجھے وہاں موجود بچوں کی زیادہ فکر تھی۔‘‘

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...