حج سکیم کے تحت سعودی عرب جانے والا فلسطینی مصر میں گرفتار،نامعلوم مقام پر منتقل

حج سکیم کے تحت سعودی عرب جانے والا فلسطینی مصر میں گرفتار،نامعلوم مقام پر ...

غزہ (یو این پی)مصری حکام نے غزہ کی پٹی سے تعلق رکھنے ایک فلسطینی کو حراست میں لینے کے بعد نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔ حراست میں لیے گئے فلسطینی کو خادم الحرمین الشریفین کی طرف سے جاری کردہ حج اسکیم کے تحت فریضہ حج کی ادائیگی کیلئے دیگر فلسطینیوں کے ہمراہ مصر کے راستے سعودی عرب روانہ کیا گیا تھا۔

امریکا نے نیوکلیئر بموں کی نئی اقسام کا تجربہ کرلیا

غیر ملکی میڈیاکے مطابق گرفتار مصری فلسطینی عازم حج 41 سالہ عبدالقادر حمدان قشطہ کے اہل خانہ سخت پریشان ہیں۔انہوں نے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی سے اپیل کی ہے کہ وہ حمدان کی رہائی کیلئے مداخلت کریں جبکہ عبدالقادر حمدان قشطہ کے اہل خانہ نے مصری صدر اور سعودی فرمانروا کو مداخلت کے لیے خطوط ارسال کئے ہیں۔دوسری جانب مصر میں حراست میں لیے گئے فلسطینی کے بھائی خالد القشطہ نے سوشل میڈیا پر پوسٹ ایک بیان میں کہا ہے کہ حمدان قشطہ کو ابھی تک رہا نہیں کیا گیا اور نہ ہی اس کی گرفتاری کی وجہ سامنے آسکی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حمدان قشطہ کو خادم الحرمین الشریفین کی طرف سے شروع کردہ مفت حج اسکیم کے تحت ایک ہزار فلسطینی عازمین حج کے ساتھ بھیجا گیا تھا مگر اسے غزہ گذرگاہ عبور کرتے ہی کچھ فاصلے پر موجود مصری فوجیوں نے حراست میں لے لیا۔خالد کا کہنا ہے کہ ان کے بھائی حج کے سفرمیں اکیلے نہیں بلکہ ان کی والدہ بھی ان کے ہمراہ تھیں وہ ابھی تک قاہرہ کے ہوائی اڈے پر حمدان کی منتظر ہیں۔واضح رہے کہ مصری سیکیورٹی فورسز نے حمدان قشطہ کو فریضہ حج کی ادائی کے لیے رفح گزرگاہ عبور کرنے کے بعد شیخ زوید کے مقام پر حراست میں لے لیا تھا۔ اس کے بعد اسے کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...