پولی ٹیکنیکل انسٹیٹیوٹ شیخوپورہ میں تقریبِ تقسیمِ انعامات کی پُر وقار تقریب

پولی ٹیکنیکل انسٹیٹیوٹ شیخوپورہ میں تقریبِ تقسیمِ انعامات کی پُر وقار تقریب

تقسیم انعامات کے پروگرام میں ڈی سی شیخوپورہ ارقم طارق اور ایڈیشنل ایس پی آصف امین اعوان مہمان خصو صی تھے جس میں LPI سے فارغ ہونے والے طلباء کو پاکستان کی بہترین یونیور سٹیز میں داخلہ لینے پر انعامات سے نوازا گیا اس کے علاوہ LPI کے اساتذہ کو بہترین تعلیم دینے پر شیلڈز دی گئیں لاہورپولی ٹیکنیکل انسٹیٹیوٹ شیخوپورہ میں یکم ستمبر 2007 ؁ ء کو با قاعدہ تعلیمی و تدریسی سرگرمیوں کا آغاز ہوا اساتذہ کی محنت اور کاوش کی بدولت 2010 ؁ ء میں تین سال مکمل کرنے والے 180 طلباء ڈپلومہ حاصل کر کے فارغ التحصیل ہوئے اچھے ماحول اور اعلیٰ نتائج سے ادارے کی انتظامیہ اور اساتذہ میں ہمت حوصلہ اور ولولہ بڑھا نصابی اور ہم نصابی سرگر میوں پر بھر پور توجہ دی گئی ادارے کے نتائج ڈسپلن اور اساتذہ کی کوشش سے ادارہ کی شہرت کو چار چاند لگ گئے ضلع بھر میں ادارہ طلباء والدین اور ماہرین تعلیم کی توجہ کا مرکز بن گیا ادارے کی تعلیمی معیا ،نظم و ضبط اور نتائج کو دیکھ کر محکمہ تعلیم کے اساتذہ اور صدر معلمین نے والدین کی داخلہ کے سلسلہ میں رہنمائی کی اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے 2012 ؁ء، 2013 ؁ء،2014 ؁ء میں ادارہ میں منظور شدہ نشستوں پر 100%داخلہ ہوا داخلہ کے لئے تاخیر سے آنے والوں کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑا ۔2015 ؁ء میں بھی داخلہ ہوا تو منظور شدہ نشستیں پُر ہو گئیں 2016 ؁ء میں حسبِ سابق بھر پور انداز میں ہوا 2011 ؁ء میں حافظ سہیل محمد عمران نے (DAEمکینیکل ) ٹیکنالوجی میں بورڈ میں نمایاں پوزیشن حاصل کی اچھے نمبر حاصل کرنے والے درجنوں طلبا ء نے اعلیٰ تعلیم کے لئے سرکاری اور غیر سرکا ری یونیور سٹیوں میں داخلہ لیا ادارہ کی انتظامیہ نے رانا ماجد محمود کو نئی موٹر سائیکل انعام کے طور پر دی ۔بورڈ کے سالانہ امتحان 2014 ؁ء میں شرکت کرنے والے ریگولر طلباء کی تعداد 1564 تھی۔2015 ؁ء میں امتحان میں شرکت کرنے والے ریگولر طلباء کی تعداد 1584 ہے۔2015 ؁ء میں سال اول دوم اور سوم کے 1590طلباء کی تعداد نے سالانہ امتحان اول میں جون 2015 ؁ میں شرکت کی ۔ امتحانی نتائج شاندار رہے ادارے کے ٹیکنیکل کے ہونہار طالبعلم سید مجیب الرحمان شاہ نے سال اول میں 1068/1150 نمبر حاصل کر کے پنجاب بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن میں پہلی پوزیشن حاصل کی اور PBTEسے سکالر شپ حاصل کیا ضلع میں دوم اور سوم پوزیشن اسی کالج کے طلباء نے حاصل کیں 2015 ؁ء میں تھرڈ ائیر کے نمایاں کامیابی حاصل کنے والے45طلباء پنجاب کی سرکاری یونیور سٹیوں میں داخل ہوئے گزشتہ تقریب 26اپریل 2016ء میں ان طلباء کو تقسیم انعامات کی اس تقریب میں مدعو کیا گیا ہے۔ 2013 ؁ء میں تھرد ایئر کا نتیجہ 97%الیکٹریکل کا نتیجہ 99% مکینیکل کا نتیجہ 86% رہا 2014 ؁ء میں سول کا نتیجہ 100%الیکٹریکل کا نتیجہ 98% مکینیکل کانتیجہ 95%رہا 2015 ؁ء میں سول کا نتیجہ93% الیکٹریکل کا نتیجہ97%مکینیکل کا نتیجہ92% رہا 2016 ؁ ء میں سول کا نتیجہ 100% لیکٹریکل کا نتیجہ 98%مکینیکل کانتیجہ87% رہا 2017 ؁ء میں سول کا نتیجہ97%الیکٹریکل کا نتیجہ 97% مکینیکل کا نتیجہ 87%رہا اس ادارے سے اب تک 2801طلباءDAEکر کے فارغ التحصیل ہو چکے ہیں 2014 ؁ء کے بورڈ کے نتیجہ کے بعد اعلیٰ نمبر حاصل کرنے والے 55طلباء مختلف سرکاری اور 50 غیر سرکاری یونیو رسٹیوں اور کالجوں میں داخل ہوئے 2015 ؁ء میں ادارہ کے فارغ التحصیل 45طلباء سرکاری یونیو رسٹیوں میں داخل ہوکر تعلیم حاصل کر رہے ہیں ان طلبا ء کے نام اور تصاویر پراسپیکٹس کی زینت بنے اسی طرح سالانہ امتحان 2017 ؁ء میں بھی LPIکے طالب علم حمیز احمد نے بورڈ میں تیسری پوزیشن حاصل کر کے ادارے کا نام روشن کیا 2016 ؁ء میں فارغ ہونے والے کامیا ب طلباء نے پنجاب کی بہترین یونیو رسٹیوں میں داخلہ لیا 2017 ؁ء میں درجنوں طلباء نے اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لئے سرکاری وغیر سرکاری یونیو رسٹیوں میں داخلہ لیا۔ اکتوبر 2017 ؁ء میں ہمارے ادارے میں بی ۔ایس۔ سی انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کا آغاز ہو چکا ہے پہلا سمسٹر ختم ہو چکا ہے بی ۔ایس۔سی کے 60طلباء باقاعدہ تعلیم حاصل کر رہے ہیں یکم اپریل 2018 ؁ء سے دوسرا سمسٹر شروع ہو چکا ہے ۔بی۔ایس۔سی کو پڑھانے والے اساتذہ پوسٹ گریجویٹ نہایت قابل اور تجر با کار ہیں امید ہے اس سال ستمبر، اکتوبر 2018 ؁ء میں بی ۔ایس ۔سی انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں بھر پور داخلہ ہو گا ادارے سے فارغ ہونے والے بہت سے طلباء بیرونِ ملک ملازمتیں کر رہے ہیں روزانہ صبح اسمبلی میں تلاوت قر آن نعت شریف اخلاقیات اور اسلامی تعلیمات کے کے مختلف موضوعات پر اساتذہ اور طلباء کی تقاریر سے طلباء کی دینی تربیت پر توجہ دی جاتی ہے قرآن و حدیث کی روشنی میں طلبہ کو اچھے مسلمان اور اچھے شہری بننے کا درس دیا جاتا ہے اسلامی اور مشاہیر کے تہواروں پر خصوصی تقریبات منعقد کی جاتی ہیں کمرہ جماعت کی معمول کی درس و تدریس کے ساتھ ساتھ تمام ٹیکنالوجیز کے طلباء کی عملی تربیت پر بھر توجہ دی جاتی ہے مشین شاپ میں بیس مشینیں چالو حالت میں موجود ہیں مشین شاپ کو معیا ر کے مطابق مکمل طور پر اپ گریڈ کیا گیا ہے مکینیکل کے طلباء کو عملی عمارت کے پورے مواقع مہیا کئے جاتے ہیں کمپری ہینسو شاپ جملہ آلات اور مشینری سے مزین ہے جو طلباء کی تمام عملی ضروریات کو پورا کرتی ہے۔الیکٹریکل کے طلباء کے لئے وائرنگ لیب اور پاور لیب معیا ر کے مطابق ہیں طلباء مکمل طور پر عملی تربیت سے مستفید ہونے کے انتظامات ہیں ادارہ میں ہوئی سٹینڈ بائی جنریٹر ہے اور بجلی کی بندش پر طلباء کے لئے روشنی کا کو مسئلہ نہیں ہوتا سول لیب بھی طلباء کی عملی تعلیم و تربیت کی ضروریات پورا کرنے کے لئے معیار کے مطابق ہے ادارہ کی کمپیوٹر لیب شیخوپورہ کی بہترین لیب ہے تمام ٹیکنالوجیز کے طلباء کیلئے کمپیوٹر کی مکمل تربیت تسلی بخش طور پر کی جاتی ہے جدید وڈیوز اور معلوماتی فلمیں دکھانے کے لئے ادارہ میں پروجیکٹر موجود ہے جس سے طلباء کی معلومات میں خاطر خواہ اضافہ ہوتا ہے ادارہ میں طلباء اور اساتذہ کی اضافی معلومات رہنمائی اور تحقیق کے لئے ہر شعبہ اور مضامین پر مشتمل بہترین کتب موجود ہیں جس سے اساتذہ استفادہ کرتے ہیں ادارے میں تینوں ٹیکنالوجیز میں طلباء نے فٹ بال ،کرکٹ اور رسہ کشی کی ٹیمیں تیار رکھی ہیں وقتا فوقتا ان شعبوں کی ٹیموں کے مابین مقابلے ہوتے رہتے ہیں تعلیم کے ساتھ ساتھ کھیل بھی نو جوان طلباے کیلئے ضروری ہیں ادارہ میں نوجوان کی جسمانی اور ذہنی تربیت کیلئے کھیلوں کا انعقاد بھی کیا جاتا ہے۔طلباء دوسرے اداروں کے ساتھ دوستانہ میچ کھیلتے ہیں ادارہ میں ہر سال کھیلو ں کا ہفتہ (SPORTS WEEK) منایاجاتا ہے جس میں طلباء بڑے شوق اور جذبے سے حصہ لیتے ہیں اور مختلف شعبوں میں باہمی مقابلے ہوتے ہیں جیتنے والی ٹیموں اور کھلاڑیوں کو انعامات اور ٹرافیاں دی جاتی ہیں مطالعاتی دورے بھی طلباء کی تعلیم و تربیت کا حصہ ہوتے ہیں تمام ٹیکنالوجیز کے طلباء کو صنعتی اداروں زیر تعمیرات عمارت ،سڑکوں،ہیڈ ورکس، پلوں، پاور ہاؤسز ،ڈیموں تاریخی عمارات اور قدرتی عجائب دیکھنے کے لئے جایا جاتا ہے اس طرح طلبہ کی معلومات میں اضافہ ہوتا ہے اور طلباء محفوظ بھی ہوتے ہوتے ہیں ادارہ میں 45اساتذہ تدریسی فرائض انجام دے رہے ہیں اساتذہ اپنے فرائض کی ادائیگی جانفشانی سے کرتے ہیں اساتذہ محنتی دیانتدار اور فرض شناس ہیں انتظامیہ اور اساتذہ اللہ تعالیٰ کے بے حد شکر گزار ہیں جس نے ادارہ اور اساتذہ کو عزت بخشی یہ امر مسلمہ ہے کی دیانتداری، وقت کی پابندی اور پر خلوص محنت سے ہی شہرت اور عزت کا مقام حاصل ہوتا ہے۔

مزید : ایڈیشن 2