چکوٹھی،مسافروں پر شدیدتشدد،مقدمہ درج،ملزمان گرفتارنہ ہوسکے

چکوٹھی،مسافروں پر شدیدتشدد،مقدمہ درج،ملزمان گرفتارنہ ہوسکے

چکوٹھی (سٹی رپورٹر)وزیراعظم آزادکشمیر کے حلقہ انتخاب میں مسافروں پر شدید تشدد واقعہ ، ایف آئی آر درج ہونے کے باوجود پولیس ملزمان گرفتار کرنے میں ناکام ، تین روز گزر جانے کے باوجود صرف دو نامزد ملزمان کی گرفتاری ظاہر کر کے عوامی دباؤ اور غم و غصہ کم کرنے کے ہتھکنڈے استعمال کئے جانے لگے بااثر ملزمان کے ظلم کا نشانہ بننے والے افراد اور ان کے لواحقین نے ملزمان کی گرفتاری کیلئے چوبیس گھنٹے کی ڈیڈ لائن دے دی منظم احتجاج کیلئے حکمت عملی ترتیب دے دی گئی ملزمان کی عدم گرفتاری کی صورت میں شاہرائے سرینگر بند کر کے چکوٹھی کے مقام پر احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان کر دیا تفصیلات کے مطابق وزیراعظم آزادکشمیر کے حلقہ انتخاب میں چکوٹھی کے علاقہ ناگنی میں تین روز قبل ٹیکسی ڈرائیور اور اسکے دو درجن سے زائد ساتھیوں نے گاڑی میں سیٹ کے تنازعہ پر مسافروں پر حملہ کر کے شدید زخمی کر دیا علاقہ میدان جنگ میں تبدیل پولیس ملازم سمیت پانچ افراد زخمی خواتین اور بچوں کو بھی ذد وکوب کرتے ہوئے چادر اور چار دیواری کا تقدس تار تار کر دیا گیاراجہ ننا ولد فاروق ،ظہورولدفاروق ،راجہ فاروق ولدمحمد زمان ،راجہ یاسر،جابر اورراجہ پرویزنے اپنے پندرہ سے زائد ساتھیوں کے ہمراہ آہنی راڈوں،ڈنڈوں،لاتوں اور مکوں سے مظفرآباد جانے والے مسافروں پر حملہ کیا جس کے نتیجہ میں پانچ افراد جن میں عبدالقیوم ولد عبدالکریم،عبدالزاق ولد منور حسین، تھانہ پولیس چناری کا ملازم نسیم احمد ولد یاسن،محمد صدیق ولد عبدالکریم اور امیر حسین ولد عبدالکریم زخمی ہو گئے ٹیکسی ڈرائیور اور اس کے ساتھیوں نے پانچ افراد کو زخمی کر نے کے علاوہ خواتین اور معصوم بچوں کو شدید زدو کوب کیاواقعہ کی ایف آئی آر تگ و دو کے بعد چناری تھانہ پولیس نے درج کی جس کے بعد تین روز گزر جانے کے باوجود پولیس صرف دکھاوے کیلئے دو ملزمان کو گرفتار کر کے عوامی غم و غصہ ٹھنڈا کرنے کی کوشش کر رہی ہے سیاسی پشت پناہی کے حامل بااثر ملزمان کو گرفتار کرنے میں پولیس مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے پولیس کی جانب سے ملی بھگت کے تحت ملزمان کو ضمانتیں کروانے کیلئے وقت دیا جا رہا ہے جبکہ بااثر ملزمان سرعام گھوم رہے ہیں اور پولیس کی جانب سے کوئی کاروائی نہیں کی گئی ٹیکسی ڈرائیور اور اس کے ساتھی کے حملہ کے بعد علاقہ میں خوف وہراس پھیلنے کے علاوہ مزید تصادم کے امکانات ہیں بااثر ملزمان کی جانب سے ظلم کا شکار ہونیوالے افراد کے خاندانوں کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں بااثر ملزمان کے ظلم کا نشانہ بننے والے افراد اور عوام علاقہ نے چوبیس گھنٹے میں ملزمان کی عدم گرفتار ی کی صورت میں شاہرائے سرینگر بند کر کے احتجاج کا فیصلہ کر لیا ہے اور وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر ، چیف جسٹس آزادکشمیر،چیف سیکرٹری آزادکشمیراور آئی جی پولیس سے اپیل کی ہے کہ اس معاملے کا نوٹس لے کر انصاف کے تقاضے پورے کرتے ہوئے انصاف دلایا جائے

مزید : کراچی صفحہ آخر