تاریخ کی متنازع ترین فلمیں

تاریخ کی متنازع ترین فلمیں
تاریخ کی متنازع ترین فلمیں

  


نیویارک(نیوزڈیسک)حال ہی میں ہالی ووڈ فلم ’دی انٹرویو‘ نے اپنی متنازعہ حیثیت کی وجہ سے دنیا بھر میں دھوم مچا دی ہے۔ کہیں اسے اس کو شدید تنقید کا سامنا ہے تو کہیں اس کے حق میں بات کی جارہی ہے لیکن یہ پہلی متنازعہ فلم نہیں جس نے دنیا بھر میں بحث کا سلسلہ شروع کردیا ہے کیونکہ ماضی میں بھی کئی متنازعہ فلموں نے بھی لوگوں کی توجہ حاصل کی۔آئیے کچھ ایسی فلموں کے بارے میں جانتے ہیں۔

اپنے بیٹے کی وجہ سے بہت شرمندہ ہوں :جیکی چن

برتھ آف نیشن(1915)

یہ فلم Klu Klux Klanکا ایجنڈا آگے بڑھانے کے لئے بنائی گئی تھی جس میں سیاہ فاموں کو درندوں کے طور پر پیش کیا گیا تھا جبکہ سفید فاموں کو نجات دہندہ بنا دیا گیا تھا۔ ا س فلم کے ریلیز ہونے کے بعد امریکہ میں فسادات بھی پھوٹ گئے تھے جبکہ اس پر مختلف شہروں میں پابندی بھی لگا دی گئی تھی۔

دی گریٹ ڈیکٹیٹر(1940)

یہ فلم جرمنی کے حکمران ہٹلر کے بارے میں بنائی گئی تھی جبکہ مشہور اداکار چارلی چپلن نے ہٹلر کا کردار ادا کیا تھا۔ اس فلم کی وجہ سے یورپ میں بہت شور مچا اور کئی ممالک نے اس فلم پر پابندی لگا دی۔

ٹیم امریکہ:ورلڈ پولیس(2004)

یہ فلم شمالی کوریا کے آمر کیم جونگ کے خلاف بنائی گئی تھی جس میں انہیں ایک خلائی مخلوق اور انسان دشمن کے طور پر پیش کیا گیا تھا۔

دی پیشن آف کرائسٹ(2004)

میل گیبسن کی یہ فلم حضرت عیسیٰؑ کی زندگی کا احاطہ کرتی ہے لیکن یہودیوں کی جانب سے اس کی خوب مخالفت کی گئی کیونکہ ان کے خیال میں یہ فلم یہودیوں کے خلاف نفرت پھیلانے کا باعث بنی۔ ان تمام باتوں کے باوجود یہ ایک سپر ہٹ فلم تھی۔

دی ڈی وینشی کوڈ(2006)

اس فلم کے ریلیز ہونے کے بعد کیتھولک چرچ کی جانب سے اس پر شدید تنقید کی گئی اور فلمساز سے مطالبہ کیا گیا کہ فلم کے شروع میں بتایا جائے کہ یہ فکشن ہے لیکن اس نے یہ کرنے سے انکار کردیا جس پر اسے عدالتی کاروائی کی دھمکی بھی دی گئی۔

مزید : تفریح


loading...