دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی لازوال قربانیوں کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی،شہباز شریف

دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی لازوال قربانیوں کی تاریخ میں مثال نہیں ...

 لاہور(پ ر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے یہاں برطانیہ کے ہائی کمشنر فلپ بارٹن نے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور، دو طرفہ تعلقات کے فروغ ، تعلیم، صحت اور دیگر سماجی شعبوں میں تعاون کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا۔ برطانوی ہائی کمشنر نے سانحہ پشاور کی مذمت کرتے ہوئے بچوں اور اساتذہ کی شہادت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے برطانوی ہائی کمشنر سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ معصوم بچوں کے خون سے ہاتھ رنگنے والے سفاک درندوں نے ظلم کی انتہا کی اور بربریت کے اس بدترین واقعہ کی نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں شدید مذمت کی گئی۔سفاکیت کے ایسے اندوہناک واقعے کی دنیا کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی۔ ماؤں کی گودیں اجاڑنے والے سفاک قاتلوں کا یوم حساب آ گیا ہے۔شہداء کے خون کے ایک ایک قطرے کا بدلہ لیا جائے گا۔ اتحاد اور اتفاق کی قوت سے دہشت گردوں کا ناپاک وجود دھرتی سے ہمیشہ ہمیشہ کیلئے مٹا کر دم لیں گے۔پاکستان کے مستقبل کے ساتھ کھیلنے والے دہشت گردوں کو نشان عبرت بنا دیا جائے گا۔ دہشت گردی کا ناسور ملک کی ترقی اور خوشحالی کیلئے زہر قاتل ہے۔ آخری دہشت گردکے خاتمے تک جنگ جاری رہے گی۔ دہشت گردی اور انتہاپسندی کے ناسور کے خاتمے کیلئے پوری پاکستانی قوم یکجا ہو چکی ہے۔ تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں نے اتحاد کا مثالی مظاہرہ کرتے ہوئے دہشت گردی کے خلاف نیشنل ایکشن پلان پر اتفاق کیا ہے۔ پاکستان میں دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کا چن چن کر خاتمہ کریں گے۔ افواج پاکستان دہشت گردوں کے خلاف بھرپور کارروائی کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 40 ہزار سے زائد پاکستانی، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اپنی جانیں نچھاور کر چکے ہیں جن میں افواج پاکستان کے افسران، جوان، پولیس حکام، اہلکار اور عام شہری بھی شامل ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی لازوال قربانیوں کی اقوام عالم میں نظیر نہیں ملتی ۔انہوں نے کہا کہ یہ جنگ ہماری آئندہ نسلوں کی بقاء کی جنگ ہے ۔پاکستان کو قائم و دائم رکھنے کیلئے اس جنگ میں پاکستانی قوم سرخرو ہوگی۔ دہشت گردی ختم کرکے ملک کو حقیقی معنوں میں امن کا گہوارہ بنائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان تجارتی اور معاشی تعلقات کو مزید فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔ پنجاب میں برطانیہ کے بین الاقوامی ترقی کے ادارے (ڈیفڈ) کے تعاون سے تعلیم، صحت اور سکل ڈویلپمنٹ کے شعبوں میں جاری پروگرامز پر کامیابی سے عملدرآمد ہو رہا ہے۔ تعلیم ایک ایسا ہتھیار ہے جس کے ذریعے انتہاپسندی اور دہشت گردی جیسے رجحانات پر قابو پایا جا سکتا ہے یہی وجہ ہے کہ پنجاب حکومت تعلیم پر خصوصی توجہ دے رہی ہے اور صوبے کے پسماندہ اضلاع میں سٹیٹ آف دی آرٹ دانش سکول قائم کئے گئے ہیں جہاں پر جدید طرز پر معیاری تعلیم فراہم کی جاتی ہے۔ بلاشبہ دانش سکول انتہاپسندی کے رجحانات کے خاتمے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سکل ڈویلپمنٹ کے ذریعے نوجوانوں کو ہنرمند بنا کر روزگار فراہم کیا گیا ہے اور اس پروگرام کا دائرہ کار بڑھایا جا رہا ہے۔ سکل ڈویلپمنٹ کے ذریعے اب تک ہزاروں نوجوانوں کو اپنے پاؤں پر کھڑا کیا گیا ہے۔ اسی طرح صحت عامہ خصوصاً مدر اینڈ چائلڈ کئیر کے حوالے سے ڈیفڈ کے تعاون سے پروگرام کامیابی سے آگے بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت برطانیہ کے ساتھ سماجی شعبوں کی ترقی کے حوالے سے تعاون کا دائرہ کار مزید وسیع کرنے کی خواہاں ہے۔برطانوی ہائی کمشنر فلپ بارٹن نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پشاور کے سکول میں معصوم بچوں اور اساتذہ کی شہادت پر دلی افسوس ہوا ہے اور برطانیہ کے عوام پاکستانی قوم کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون جاری رکھیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے صوبے کے عوام کی ترقی و خوشحالی کیلئے عملی اقدامات اٹھائے ہیں جو قابل تعریف ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کو فروغ دے کر قومی معیشت کو مضبوط بنیادوں پر استوار کیا جا سکتا ہے۔ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ سیکٹر کی جدید اور پائیدار بنیادوں پر ترقی کیلئے نجی شعبے کے ماہرین کے تجربات اور خدمات سے استفادہ کرنے کی ضرورت ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے لائیوسٹاک پالیسی مرتب کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ لائیوسٹاک پالیسی میں شارٹ، میڈیم اور لانگ ٹرم اقدامات تجویز کئے جائیں۔وہ یہاں اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے جس میں شعبہ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کی ترقی اور سلاٹر ہاؤس کی بہتری کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں جانوروں کے ضیاع پر مالکان کو نقصان کے ازالہ کیلئے آسان شرائط پر قرضہ دینے کی منظوری دی گئی جبکہ چولستان میں موجود فارمز محکمہ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کے حوالے کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں بھینسوں اور دیگر جانوروں کی بغیر ڈی این اے ٹیسٹ خریداری پر پابندی عائد کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لائیوسٹاک سیکٹر کو قومی معیشت میں بنیادی حیثیت حاصل ہے۔ اس شعبے کو ترقی دے کر جہاں روزگار کے بے شمار نئے مواقع پیدا کئے جا سکتے ہیں وہاں صوبے کی معیشت کو بھی مضبوط کیا جا سکتا ہے۔ ہماری بڑی دیہی آبادی کا روزگار بھی لائیوسٹاک سیکٹر سے وابستہ ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کے شعبے میں موجود وسیع مواقع سے فائدہ اٹھانے کیلئے مختلف پروگراموں کا بزنس ماڈل مرتب کیا جائے اور دیہی نوجوانوں کو آسان شرائط پر چھوٹے قرضوں کی فراہمی کے حوالے سے قابل عمل ماڈل بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کے مقررکردہ اہداف کو مقررہ مدت میں حاصل کرنے کیلئے ہرممکن اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ریسرچ اور ڈویلپمنٹ پر خصوصی توجہ دی جائے اور اس مقصد کیلئے موثر اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ لاہور میں جدید سلاٹر ہاؤس کے قیام سے نہ صرف شہریوں کو حفظان صحت کے مطابق گوشت کی فراہمی ممکن ہو رہی ہے بلکہ برآمدات میں بھی اضافہ ہو رہا ہے اور میں جلد سلاٹر ہاؤس کا دورہ کروں گا۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ غیرقانونی مذبحہ خانوں اور مردہ جانوروں کا گوشت فروخت کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کریک ڈاؤن جاری رکھا جائے اور انسانی صحت سے کھیلنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ جانوروں کی خوراک میں ملاوٹ کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی عمل میں لائی جائے۔ جانوروں کو بیماریوں سے بچانے کیلئے ویکسی نیشن مہم موثر انداز میں جاری رکھی جائے۔ وزیراعلیٰ نے سلاٹر ہاؤس میں بہتری لانے پرسیکرٹری لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اسی جذبہ سے کام کرتے ہوئے لائیوسٹاک سیکٹر کوفروغ دیا جائے۔قبل ازیں سیکرٹری لائیوسٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ نے لائیوسٹاک سیکٹر کے فروغ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔چیئرمین لاہور سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی خواجہ احمد حسان، ایم پی اے سید حسین جہانیاں گردیزی، سیکرٹری لائیوسٹاک،پروگریسو فارمرز ممتاز منیس، عقیلہ ممتاز، وائس چانسلر یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینیمل سائنسز، صدر بفلو ایسوسی ایشن سعید ہوتیانہ اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : صفحہ اول


loading...