غازی آ باد ،مخالفین کی فائرنگ سے قتل ہونے والاشخص سپرد خاک

غازی آ باد ،مخالفین کی فائرنگ سے قتل ہونے والاشخص سپرد خاک

لاہور(وقائع نگار)غازی آ باد میں دیرینہ دشمی کے نتیجے میں مخالفین کی فائرنگ سے قتل ہونے والے 38سالہ شخص کی لاش انویسٹی گیشن پولیس نے پوسٹ مارٹم کی کارروائی مکمل کر کے ورثا کے حوالے کردی ۔جبکہ ملزمان تاحال مفرور ہیں جن کی تلاش جاری ہے ۔ مقتول کو سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق تاجپورہ کے رہائشی ابراہیم کا 38سالہ بیٹارضوان بٹ پراپرٹی کا کام کرتا تھا اور اس کے دو بچے تھے ۔اس کی 2010میں مقامی رہائشی شبیر اور اس کے بھائیوں سے لین دین کے معاملہ میں لڑائی ہو گئی تھی جس پرطیش میں آ کر اس نے شبیر کے رشتہ دار کو قتل کر دیا تھا ۔ دو روز قبل وہ سزا کاٹ کر رہائی کے بعدگھر پہنچا،گھر والوں سے ملنے کے بعد رضوان تاجپورہ بازار میں اپنے دوستوں سے ملنے کے لیے گیا لیکن وہاں پر اس کے مخالفین بشیر اور اس کے ساتھی پہلے ہی گھاٹ لگائے بیٹھے تھے ۔جب رضوان کا ان سے سامنا ہوا تو انہوں نے اس پر اندھا دھند فائرنگ کر دی اور اس کو شدید زخمی کر دیا جبکہ ملزمان فائرنگ کرتے ہوئے موقع سے فرار ہو گئے۔اطلاع ملنے پرریسکیو1122نے موقع پر پہنچ کر زخمی کو قریبی ہسپتال میں منتقل کرنے کی کوشش کی لیکن وہ راستے میں جاں بحق ہو گیا ۔

مزید : علاقائی


loading...