پرنسپل گورنمنٹ گرلز کالج مری کیخلاف ،ہائیکورٹ کے حکم پر تحقیقات شروع

پرنسپل گورنمنٹ گرلز کالج مری کیخلاف ،ہائیکورٹ کے حکم پر تحقیقات شروع

لاہور( ارشد محمود گھمن)گورنمنٹ گرلز کالج مری کی پرنسپل کی من مانیاں ،4سال سے کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال پرڈی جی اینٹی کرپشن نے عدالت عالیہ کے حکم پر تحقیقات شروع کردیں ۔ لیکچرارزرینہ عباسی نے مذکورہ پرنسپل کے خلاف کارروائی کے لئے ڈی جی اینٹی کرپشن کو درخواست دے رکھی تھی تاہم کارروائی نہ ہونے پر انہوں نے عدالت عالیہ میں رٹ دائر کی ہے ۔تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ گرلز کالج مری کی پرنسپل روبینہ نصیر ستی کے خلاف کرپشن ، اختیارات سے تجاوز اورفنڈز میں لاکھوں روپے خورد برد کئے جانے کے حوالے سے سیکرٹری ایجوکیشن اور ڈی جی اینٹی کرپشن کو 22جولائی 2015ء کو درخواست دی جس پر عمل درآمد نہیں ہوا ، بعدازاں سائلہ نے 10نومبر کو عدالت عالیہ میں مذکورہ پرنسپل، سیکرٹری ایجوکیشن اور ڈی جی اینٹی کرپشن کے خلاف دی جانے والی درخواست پر عمل درآمد نہ کرنے پر رٹ پٹیشن نمبر33557دائر کی جس پر عدالت عالیہ نے ڈی جی اینٹی کرپشن لاہور سے 2ماہ کے اندر رپورٹ طلب کی ہے ۔ ڈی جی اینٹی کرپشن نے مختلف الزامات پر مذکورہ پرنسپل کے خلاف کارروائی کرنے کے لئے درخواست گزار زرینہ عباسی (لیکچرار)اور اس کے وکیل سید نغمان حیدر زیدی کو درخواست کی پیروی کیلئے 31دسمبر 2015ء کو طلب کرلیاہے ۔درخوست گزار نے رٹ درخواست میں الزام عائد کیا ہے کہ روبینہ نصیر ستی عرصہ دراز سے پرنسپل ہے جس نے کرپشن کا بازار گرم کررکھا ہے ،حکومت کی طرف سے کالج کے فنڈزکو اپنی ذاتی آسائشوں پر خرچ کیا جاتا ہے ، کالج کی کمیٹی سے منظوری نہ لی جاتی ہے ،پرنسپل اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے اپنی مرضی سے فوٹو کاپی مشین و دیگر اسٹیشنری وغیرہ کے بلز ڈال دئیے جاتے ہیں کالج کی تعمیرات کے حوالے سے بھی من مانی سے کام شروع کروادیتی ہے ۔6 ماہ قبل اس کی کرپشن کے خلاف مسز لبنیٰ شہزاد وائس پرنسپل نے بھی انکوائری کی درخواست دی مگر اس پر بھی کوئی کارروائی نہ ہو سکی ۔زرینہ عباسی نے دائردرخواست میں مزید موقف اختیار کیا ہے کہ مذکورہ پرنسپل ڈی او اور کالج کی رقوم سے بانسرا گلی میں اپنے گھر کے اخراجات چلاتی ہیں، طالبات سے جرمانے کرکے ناجائز فنڈ لئے جاتے ہیں اور یہ اپنے کارخاص ڈرائیور اور اسٹنٹ لیب کے ذریعے استعمال کرتی ہیں اور من گھڑت بل ڈال کر فنڈز کے اخراجات میں ڈال دیتی ہیں ۔درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ گورنمنٹ گرلز کالج مری راولپنڈی کی پرنسپل کی کرپشن کا 2011سے 2015تک آڈٹ کیا جائے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...