پارا چنار میں پولیو مہم شروع ، 123000 بچوں کو قطرے پلائے جائینگے

پارا چنار میں پولیو مہم شروع ، 123000 بچوں کو قطرے پلائے جائینگے

پاراچنار (نمائندہ پاکستان )پاراچنار میں پولیو کا خصوصی مہم شروع ہوگیا ہے جس میں 123000 بچوں کو قطرے پلائے جائینگے جب کہ مختلف امراض سے بچاو کے ٹیکے بھی لگوائے جائینگے۔ افغان سرحد کے قریب لیویز اہلکار کی پولیو سپروائزر کی گاڑی پر فائرنگ سے ڈرائیور زخمی ہوگیا۔ایجنسی سرجن آفس پاراچنار میں پولیو ویکسینیشن مہم کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایجنسی سرجن ڈاکٹر معین بیگم ، ایم ایس ایم او ڈاکٹر حامد علی نے کہا کہ کرم ایجنسی میں 123000 سے زائد بچوں کو پولیو ویکسین کے قطرے پلانے اور دیگر مختلف امراض سے بچوں کو بچانے کیلئے خصوصی مہم چلائی جارہی ہے اور بچوں کو حفاظتی ٹیکہ لگانے کا مہم ایک بار چلایا جارہا ہے اور گذشتہ کئی سال سے کرم ایجنسی پولیو فری زون کا حامل ہونا یہاں کے قبائل کے بھر پور تعاون کا نتیجہ ہے۔ اس موقع پر قبائلی عمائدین نے کہا کہ پولیو سمیت تمام امراض سے کرم ایجنسی اور فاٹا کو پاک رکھنے کیلئے وہ محمکہ صحت کے ساتھ بھر پور تعاون کرینگے۔ تقریب کے اختتام پر بچوں کو پولیو ویکسین کے قطرے بھی پلائے گئے ۔دوسری جانب کرم ایجنسی میں پاک افغان سرحد کے قریب علاقہ پیواڑ میں سرکاری چیک پوسٹ پر پولیوسپر وائزر معصوم بیگم کی گاڑی پر لیویز اہلکار کی فائرنگ سے ڈرائیور گلزار حسین زخمی ہوگیا جسے پاراچنار ہسپتال پہنچا دیا گیا پولیٹیکل حکام نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی اور واقعے پولیٹیکل حکام نے انتظامی افسران اور محکمہ صحت کے اہلکاروٖں کی ہنگامی میٹنگ شروع کردی۔

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...