متحدہ عرب امارات میں سینکڑوں گھر گرانے کا فیصلہ، کس ڈر سے ایسا کیا جارہا ہے؟

متحدہ عرب امارات میں سینکڑوں گھر گرانے کا فیصلہ، کس ڈر سے ایسا کیا جارہا ہے؟
 متحدہ عرب امارات میں سینکڑوں گھر گرانے کا فیصلہ، کس ڈر سے ایسا کیا جارہا ہے؟

  


ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کے حکام نے سینکڑوں متروک بنگلوں کو عوام کے لئے خطرہ قرار دے کر گرانے کا اعلان کر دیا ہے۔جریدے عریبین بزنس نے مقامی میڈیا کے حوالے سے بتایا کہ یہ بنگلے طویل عرصے سے ویران پڑے ہیں اور خدشہ ہے کہ انہیں جرائم پیشہ افراد منشیات ذخیرہ کرنے کے لئے، مجرموں یا غیر قانونی ملازمین کو مقیم رکھنے کے لئے، یا جنسی جرائم کے لئے استعمال کررہے ہیں۔ دبئی میونسپلٹی کے حکام کا کہنا ہے کہ یہ متروک بنگلے پبلک سیکیورٹی اور صحت عامہ کے لئے خطرہ بن چکے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق میونسپلٹی نے 2011ء سے لے کر اب تک 713 متروک گھروں کی نشاندہی کی ہے جن میں سے 303 کو پہلے ہی منہدم کیا جاچکا ہے جبکہ 256 گھروں کے مالکان کو نوٹس دیا گیا ہے کہ وہ یاتو ان گھروں کی تعمیر نو اور بحالی کریں یا دوسری صورت میں انہیں گرایا جائے۔ حکام نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ سرکاری مداخلت پر گرائے جانے والی عمارتوں کے مالکان سے انہدام اور ایڈمنسٹریشن فیس کی مد میں اخراجات بھی وصول کئے جائیں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...