آپریشن سے 80 فیصد امن قائم ہوا، ہماراآئینی اختیار قبول کیا جائے ،رینجرز پر قدغن نہیں لگانا چاہتے: قائم علی شاہ

آپریشن سے 80 فیصد امن قائم ہوا، ہماراآئینی اختیار قبول کیا جائے ،رینجرز پر ...
آپریشن سے 80 فیصد امن قائم ہوا، ہماراآئینی اختیار قبول کیا جائے ،رینجرز پر قدغن نہیں لگانا چاہتے: قائم علی شاہ

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ کسی بھی ادارے کو بلامشروط یا شرائط کے ساتھ بلانا صوبائی حکومت کا اختیار ہے،اسمبلی کی قرارداد میں رینجرز کو 60 دن کیلئے بلانے کی مشروط اجازت دی گئی تھی۔وزیر اعظم، گورنر ، آرمی چیف اور تمام سیاسی جماعتوں کے مشورے سے کراچی میں آپریشن شروع ہوا،ہمارے حساب سے آپریشن سے 80 فیصد امن قائم ہوا ہماراآئینی اختیار قبول کیا جائے ہم رینجرز پر کوئی قدغن نہیں لگانا چاہتے۔

وزیر اعظم نواز شریف سے رینجرز اختیارات کے حوالے سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم سے خوشگوار ماحول میں ملاقات ہوئی اور انہوں نے بہت عزت دی ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ کراچی آپریشن کے کپتان آپ ہی ہیں،آپریشن کا کپتان میں تھا اور ہوں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں وفاق کے ساتھ لڑائی نہیں لڑنی بلکہ ساتھ چلنا ہے، آئین کے آرٹیکل 147 کے تحت وفاقی حکومت کو سفارش کرکے رینجرز کو ایک سال کیلئے بلایا تھا جس کے بعد صوبائی اسمبلی سے مشروط اجازت دی گئی ۔ اختیارات کے معاملے پر ڈی جی رینجرز کو اعتماد میں لیا جس پر ڈی جی نے کہا کہ مشروط ہو یا غیر مشروط لیکن اجازت جلدی دی جائے،ڈی جی رینجرز اور کورکمانڈر سے میٹنگز میں طے پایا کہ کسی بھی وزیر کیخلاف کارروائی سے پہلے وزیر اعلیٰ کو اعتماد میں لیا جائے گا، افسران کے خلاف کارروائی سے قبل چیف سیکرٹری کو اعتماد میں لینے کی شرط رکھی ۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں امن مشترکہ کوششوں سے ہی ممکن ہے جب تک مسئلہ حل نہیں ہوجاتا، بات چیت جاری رہے گی۔ کرپشن کا خاتمہ صوبائی حکومت کا معاملہ ہے،یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ صرف سندھ میں ہی کرپشن ہے۔صوبے کسی بھی ادارے کو مشروط یا غیر مشروط طور پر بلانے کے مجازہیں اور اس حوالے سے وزیر اعظم سے خوشگوار ماحول میں بات ہوئی،وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کو کہا کہ ہماراآئینی اختیار قبول کیا جائے ہم رینجرز پر کوئی قدغن نہیں لگانا چاہتے۔وزیر اعظم نے چوہدری صاحب کو ایک ہفتے میں کراچی جانے کی ہدایت کی اور ہمیں کہا کہ ان کا مکمل تعاون ہمارے ساتھ رہے گا۔

رینجرز کے اخراجات کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں رینجرز کے تمام اخراجات صوبائی حکومت اٹھارہی ہے۔ سابق صدر آصف علی زرداری کی وطن واپسی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ آصف علی زرداری پر کوئی کیس نہیں ہے اور نہ ہی ان پر پاکستان آنے کی راہ میں کوئی رکاوٹ ہے وہ علاج کی وجہ سے لندن میں ہیں، جب بھی چاہیں پاکستان آسکتے ہیں ۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...