دو عالمی طاقتوں کے درمیان جنگ، قدرتی آفات میں شدت اور تیسری دنیا سے اٹھنے والا پراسرار لیڈر، تاریخ کے مشہور شخص کی آخری وقتوں کے بارے میں تہلکہ خیز پیشنگوئیاں منظر عام پر

دو عالمی طاقتوں کے درمیان جنگ، قدرتی آفات میں شدت اور تیسری دنیا سے اٹھنے ...
دو عالمی طاقتوں کے درمیان جنگ، قدرتی آفات میں شدت اور تیسری دنیا سے اٹھنے والا پراسرار لیڈر، تاریخ کے مشہور شخص کی آخری وقتوں کے بارے میں تہلکہ خیز پیشنگوئیاں منظر عام پر

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) فرانس کا شہرہ آفاق ماہرعلم نجوم نوسٹراڈیمس(Nostradamus) جو 1503ءمیں پیدا ہوا اور 1566ءمیں دنیا سے رخصت ہوا تھا، اس نے دنیا کے آخری وقت کے بارے میں تہلکہ خیز پیش گوئیاں کی تھیں۔ ویب سائٹ سپیکنگ ٹری ڈاٹ ان نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ نوسٹراڈمس نے 1555ءمیں پہلی کتاب Les Prophetiesلکھی تھی جو آج تک چھپ رہی ہے اور فروخت ہو رہی ہے۔یہ پیش گوئیاں اس نے اسی کتاب میں کی تھیں۔

مزید جانئے: دو دن میں قطری شاہی خاندان کے 9 جہازوں کی یورپی ائیرپورٹ پر لینڈنگ، وجہ بھی سامنے آگئی

نوسٹراڈمس نے اس کتاب میں پیش گوئی کی ہے کہ ”ایک لیڈر کی غلطی کی وجہ سے ایک بین الاقوامی حادثہ رونما ہو گا اور اس حادثے میں سب سے بڑا مسئلہ یہ ہو گا کہ 2سپر طاقتوں کے باہمی تعلقات منقطع ہو جائیں گے۔ یہ صورتحال مزید پیچیدہ ہوتی چلی جائے گی۔ وہ لیڈر، جس کی غلطی کی وجہ سے یہ سب ہوا ہو گا، اب اس غلطی پر پچھتائے گا اور اپنے عہدے پر برقرار رہتے ہوئے صورتحال کو بہتر بنانے کی کوشش کرے گا۔ واضح رہے کہ ترکی اور روس کے درمیان آج کل کچھ ایسی ہی صورتحال نظر آتی ہے۔

نوسٹراڈیمس مزید لکھتا ہے کہ مشرق وسطیٰ میںاسی کشیدہ صورتحال کے دوران بحیرہ روم کے کنارے آباد ایک ملک ( غالباًترکی)کا لیڈر ایٹم بم حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائے گا۔ وہ مزاج کا تیز ہو گا اور چھوٹی چھوٹی باتوں پر بہت دور تک جانے والا ہو گا۔ یہ لیڈر ایٹم بم استعمال کرنے سے بھی نہیں ہچکچائے گا، لیکن جواب میں دوسرا ملک بھی اس پر ایٹمی حملہ کر دے گا۔

نوسٹراڈیمس لکھتا ہے کہ ایک وقت آئے گا جب تیسری دنیا کے ایک ملک سے سیاہ رنگت والا ایک نوجوان لیڈر اٹھے گا، اور وہ اس وقت کی سپرطاقتوں کے خلاف جنگ کے لیے تیسری دنیا کے ممالک کو متحد کرے گا۔ اس جنگ کا مرکز مشرقی یورپ اور مشرق وسطیٰ ہوں گے۔ خاص طور پر یہ جنگ بحیرہ قزوین، مشرقی بحیرہ روم اور اس کی ایک شاخ ایڈریاٹک (Adriatic) میں لڑی جائے گی۔ اس جنگ میں کسی کو بھی واضح فتح حاصل نہیں ہو گی لیکن اس سے دجال کی آمد کی راہ ہموار ہو جائے گی۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب کیلئے تشویشناک خبر آگئی، ملکی تاریخ کا افسوسناک ریکارڈ بن گیا، پہلی مرتبہ۔۔۔

مزید پیش گوئیاں کرتے ہوئے نوسٹراڈیمس لکھتا ہے کہ ایک وقت آئے گا جب ایک بہت زیادہ روشن دم دار ستارہ نمودار ہو گا۔ اس وقت بہت بڑے ارضیاتی مسائل پیدا ہوں گے۔ زلزلے آئیں گے اور آتش فشاں پھٹیں گے جس سے دنیا کی معیشتیں برباد ہوں گی اور موسم بتانے والے سسٹم ناکارہ ہو جائیں گے۔اس وقت دنیا شدید خشک سالی اور غذائی قلت کا شکار ہو جائے گی اور غیرمتوقع خطوں اور ممالک میں ہنگامے پھوٹ پڑیں گے۔

اس وقت جو ممالک خوشحال اور طاقتور سمجھے جاتے ہوں گے، خاص طور پر مغربی ممالک، وہ کمزور ہو جائیں گے۔ وہ اندرونی فسادات اور لڑائی جھگڑوں سے تباہ ہوں گے کیونکہ وہاں کے لوگ ان علاقوں کی طرف ہجرت کریں گے جہاں پانی موجود ہو گا اور فصلیں اگائی جا سکیں گی۔ یہی صورتحال دجال کے اقتدار میں آنے کا باعث بنے گی، مگر اس کا اقتدار خشک گھاس کی آگ جیسا ہوگا، جو خوب ہنگامہ خیز ہو گا لیکن جلد ہی زوال پزیر ہو جائے گا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...