پانی کی صفائی کے لئے راوی کمشن کی سفارشات پر عمل کیا جائے،ہائی کورٹ کا چیف سیکرٹری کو حکم

پانی کی صفائی کے لئے راوی کمشن کی سفارشات پر عمل کیا جائے،ہائی کورٹ کا چیف ...
پانی کی صفائی کے لئے راوی کمشن کی سفارشات پر عمل کیا جائے،ہائی کورٹ کا چیف سیکرٹری کو حکم

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے چیف سیکرٹری پنجاب کو حکم دیا ہے کہ دریائے راوی کے پانی کی صفائی کے لئے راوی کمشن کی سفارشات پر عمل درآمد کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں اور اس سلسلے میں عبوری رپورٹ ایک ماہ میں پیش کی جائے۔مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے یہ حکم دریائے راوی پراجیکٹ پر عمل درآمد کے لئے دائر درخواست کی مزیدسماعت 13جنوری پر ملتوی کرتے ہوئے جاری کیا۔عدالت کو بتایا گیا کہ 20نومبر کے عدالتی حکم کی روشنی میں 27نومبر کو ریور راوی فرنٹ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے حوالے سے متعلقہ حکام کا اجلاس ہوا تھا۔دریائے راوی کمشن کے مطابق دریائے راوی کے پانی کی صفائی کے منصوبہ کے لئے صرف50ملین روپے درکار ہیں جبکہ اس کے لئے مجموعی طور پر 50ایکڑ اراضی کی ضرورت ہوگی،عدالت کو مزید بتایا گیا کہ دریائے راوی میں بہنے والے آلودہ پانی کے باعث اس میں پائی جانے والی مچھلیوں کی 42اقسام پہلے ہی ختم ہوچکی ہے۔دوسری طرف ایل ڈی اے حکام کا موقف ہے کہ اس پراجیکٹ پر 3ارب ڈالر روپے (3کھرب 18ارب روپے)کی ضرورت ہے۔ایل ڈی اے کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس پراجیکٹ کے لئے 300ایکڑ اراضی کی ضرورت ہے،راوی کمشن کے سیکرٹری اور درخواست گزار احمد رافع عالم نے عدالت کو بتایا کہ کمشن نے ریور راوی فرنٹ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے حوالے سے ہونے والے اجلاس میں ایل ڈی اے حکام سے ضروری معلومات حاصل کیں تو معلوم ہوا کہ ابھی تک نہ پی سی ون تیار ہوا ہے اور نہ ہی ای آئی اے کے حوالے سے کوئی یقین دہانی لی گئی ہے۔فاضل جج نے ایل ڈی اے کے تحفظات کی وضاحت کرتے ہوئے راوی کمشن کی سفارشات کو عدالتی تحفظ فراہم کیا اور قرار دیا کہ دریائے راوی کے پانی کی صفائی کا پراجیکٹ بغیر کسی اضافی اخراجات کے راوی کمشن کے سپرد کیا جاسکتا ہے۔اس کیس کی مزید سماعت 13جنوری کو ہوگی۔

مزید : لاہور


loading...