ٹیکسٹائل برآمدات ،پاکستان خطے کے دوسرے ممالک سے پیچھے رہ گیا

ٹیکسٹائل برآمدات ،پاکستان خطے کے دوسرے ممالک سے پیچھے رہ گیا

  

کراچی(اکنامک رپورٹر) دس سال کے دوران ٹیکسٹائل کی برآمدات میں 27 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ عالمی بینک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کا شمار کپاس پیدا کرنے والے بڑے ممالک میں ہوتا ہے اوریہاں پیدا کی جانے والی روئی کا معیار کپاس پیدا کرنے والے دیگر کئی ممالک کے مقابلہ میں کہیں بہتر ہے تاہم ٹیکسٹائل کی برآمدات میں خطے کے دیگر ممالک کے مقابلہ میں کم اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ کے مطابق سال 2005ء تا 2016ء کے دوران بنگلہ دیش کی ٹیکسٹائل برآمدات 276 فیصد جبکہ ویتنام کی ٹیکسٹائل برآمدات میں اسی عرصہ کے دوران 445 فیصد کا اضافہ ہوا ہے جبکہ یہ دونوں ممالک کپاس پیدا نہیں کرتے۔ کپاس پیدا نہ کرنے والے ممالک کی برآمدات کے مقابلہ میں پاکستان کی ٹیکسٹائل برآمدات میں کم شرح سے ہونے والا اضافہ قابل توجہ ہے۔ ادھر ادارہ برائے شماریات پاکستان (پی بی ایس) کے اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے دوران ٹیکسٹائل کی ملکی برآمدات معمولی ردوبدل کے ساتھ 5.5 ارب ڈالر رہی ہیں۔ شعبہ کے ماہرین نے کہا ہے کہ ٹیکسٹائل کی روایتی برآمدات کی بجائے مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق ویلیو ایڈڈ مصنوعات کی تیاری اور اس کیلئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کے ذریعے برآمدات میں خاطر خواہ اضافہ کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔

مزید :

کامرس -