گلشن آباد ‘ زہریلی ہیروین فروخت کرنیکا انکشاف ‘ لاشیں ملنے کا سلسلہ پھر شروع

گلشن آباد ‘ زہریلی ہیروین فروخت کرنیکا انکشاف ‘ لاشیں ملنے کا سلسلہ پھر شروع

  

ملتان ( وقائع نگار)تھانہ چہلیک کے علاقے میں زہریلی ہیروئن کی فروخت سے لاشیں ملنے کا سلسلہ پھر شروع ہو گیا ہے واضح رہے کہ دو ماہ قبل تھانہ چہلیک کے علاقے میں گلشن آباد میں زہریلی ہیروئن کی فروخت پر آر پی او ملتان مہر وسیم نے ایکشن لیا تھا اور اس کی فروخت بند ہو گئی اس سلسلے میں ایک پولیس اہلکار کے خلاف انکوائری شروع کی گئی مگر پولیس کے اعلی افسر نے ملی بھگت کر کے انکوائری(بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

ڈراپ کر دی آر پی او ملتان کو سب اچھا کی رپورٹ دے دی گئی جس کے نتیجے میں ہیروئن کی فروخت دوبارہ شروع ہو گئی ہے جس میں پولیس کے اہلکار ملوث بتائے جاتے ہیں جس سے ہلاکتوں کا سلسلہ دوبارہ شروع ہو گیا ہے اور گزشتہ روز بھی باغ لانگے خان سے ایک شخص کی لاش ملی ہے جس کی شناخت نہ ہو سکی ہے اور پولیس نے بتایا کہ مرنے والا نشئی ہے اور نشہ کی وجہ سے مرا ہے تاہم اصل حقائق پوسٹ مارٹم کے بعد سامنے آئیں دوسری جانب گلشن آباد کے رہائشیوں نے آر پی او ملتان سے ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف کاروائی کااور غیرجانبدار آفیسر سے اس دھندے میں ملوث اہلکاروں کے خلاف تحقیقات کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -