جے آئی ٹی رپورٹ مفروضوں پر مبنی ،مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل میں ڈالنا سندھ حکومت کے خلاف سازش ہے:ناصر حسین شاہ 

جے آئی ٹی رپورٹ مفروضوں پر مبنی ،مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل میں ڈالنا سندھ ...
جے آئی ٹی رپورٹ مفروضوں پر مبنی ،مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل میں ڈالنا سندھ حکومت کے خلاف سازش ہے:ناصر حسین شاہ 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نہیں ’’فراڈ چوہدری‘‘ ہے، پیپلزپارٹی کے رہنماؤں سے متعلق جے آئی ٹی رپورٹ مفروضوں پر مبنی ہے،ای سی ایل میں وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کا نام ڈالنا سندھ حکومت کے خلاف سازش ہے، ایک مرحوم شخص کا نام بھی ای سی ایل میں ڈالا گیا جس سے واضح ہوتا ہے کہ ہماری حکومت کو کمزور کرنے کی کوشش ہے۔

بلاول ہاؤس کراچی میں چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعلی مراد علی شاہ ہی رہیں گے ،پی ٹی آئی یا دیگر کسی جماعت کی سازشوں میں کوئی صداقت نہیں، قیادت کا سو فیصد مراد علی شاہُ کو اعتماد حاصل ہے،کورٹ میں جوابات جمع ہونگے تو یہ جھوٹے ثابت ہونگے،عدالت سے انصاف کی امید ہے،جنھوں نے رپورٹ پیش کی وہ خود بھی پریشان ہیں کیونکہ کوئی ثبوت نہیں ہے ۔سید ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی حکومت مانگے تانگے کی ہے، کوشش کی گئی ہے سندھ کی ترقی کا سفر روکا جائے، بیورو کریسی پر پریشر ڈالا جارہا ہے، سندھ میں ترقی کا ثبوت 2018 کا الیکشن ہے،سی پی پیک میں سنگ کا ڈیو شئیر نہ دینے کےلیے ای سی ایل میں نام  ڈال رہے ہیں۔ ناصر شاہ  نے تحریک انصاف کے رہنماؤں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ فواد چوہدری فراڈیا ہے،خرم شیر زمان، حلیم عادل شیخ نے خود 6 ہزار ووٹ لئے ہیں اور بڑی باتیں کرتے ہیں،انکی پارٹی کے لوگ بھی  ان سے نالاں ہیں۔سید ناصر شاہ نے کہا کہ وزیرِ اعلیٰ مراد علی شاہ ہی رہینگے ، پیپلز پارٹی کے سامنے سب کھوکھلے ہیں،گورنر صاحب شکار پر گئے ہیں اور جی ڈی اے کے پہلوان خالی ڈبے ہیں، پی ٹی آئی کی حکومت خود ہچکولے کھارہی ہے، پی ٹی آئی والوں کو شرم آنی چائیے، سی ایم میرے باس اور ہم  ایک ہی ٹیم کا حصہ ہیں،میری اور سی ایم کی پارٹی چیئرمین سے الگ الگ ملاقات نہیں ہوئی۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -