عثمان بزدار، جام کمال ملاقات، عوامی خدمت میں حائل رکاوٹوں کا مقابلہ کرنے پر اتفاق

       عثمان بزدار، جام کمال ملاقات، عوامی خدمت میں حائل رکاوٹوں کا مقابلہ ...

  



 لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک نیوزایجنسیاں)وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارسے بلوچستان کے وزیراعلیٰ جام کمال خان کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی۔ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور،پنجاب اور بلوچستان کے مابین مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے اور بین الصوبائی ہم آہنگی کے فروغ کیلئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بلوچستان کے وفد کے ساتھ بلوچی زبان میں بھی گفتگو کی-دونوں وزرائے اعلیٰ نے نئے سال میں نئے جذبے اور عزم کے ساتھ عوام کی خدمت کے عزم کا اعادہ کیا-دونوں وزرائے اعلیٰ نے اس بات پر اتفاق کیاکہ عوامی خدمت کی راہ میں حائل ہونے والی رکاوٹوں کا ملکر مقابلہ کریں گے-سازشیں کرنے والے پہلے بھی ناکام و بے مرادرہے اورآئندہ بھی ایسے عناصر کو کامیابی نہیں ملے گی-وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارنے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ تنقید کرنے والے عناصر پاکستان کی ترقی اور عوام کی خوشحالی سے خائف ہیں -ترقی اور خوشحالی کے سفر میں دونوں صوبے قدم سے قدم ملا کر آگے بڑھیں گے۔ نئے پاکستان کی تعمیر و ترقی کے سفر میں شانہ بشانہ چلیں گے۔ پنجاب حکومت بلوچستان کی ترقی اور عوام کی خوشحالی کیلئے ہر ممکن تعاون جاری رکھے گی۔انہوں نے کہاکہ بلوچستان کے عوام کی ترقی و خوشحالی اسی طرح عزیز ہے جس طرح پنجاب کے عوام کی - بلوچستان کی ترقی پاکستان کی ترقی ہے - بلوچستان کے طلبا و طالبات کیلئے پنجاب کے تعلیمی اداروں میں خصوصی کوٹہ مقرر کیا گیا ہے۔ بلوچستان کے طلبا و طالبات کو اعلیٰ تعلیم کیلئے وظائف فراہم کئے گئے ہیں۔بلوچستان کے عوام کیلئے پنجاب حکومت کوئٹہ میں 2ارب روپے کی لاگت سے دل کاہسپتال بنائے گی اور یہ ہسپتال پنجاب حکومت کا بلوچستان کے عوام کیلئے خیر سگالی کا تحفہ ہے۔وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ معصوم کشمیری عوام اپنی جدوجہد میں تنہا نہیں۔ کشمیری عوام کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ پنجاب اوربلوچستان کے لوگ محبت کی کڑی سے جڑے ہیں۔پاکستان ہم سب کا سانجھا ملک ہے۔ صوبوں میں ہم آہنگی اوریکجہتی کو فروغ دینے کیلئے مثبت کردارجاری رکھیں گے۔وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدارنے ٹھوکر نیاز بیگ کی پناہ گاہ کا دورہ کیا-صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان،رکن پنجاب اسمبلی ندیم بارا،سیکرٹری اطلاعات اور ڈپٹی کمشنر بھی وزیراعلیٰ کے ہمراہ تھے-وزیر اعلی نے پناہ گاہ میں مقیم لوگوں سے ملاقات کی -وزیراعلیٰ پناہ گاہ میں قیام کرنے والے لوگوں میں گھل مل گئے -وزیراعلیٰ نے پناہ گاہ میں قیام کے لئے آئے افراد سے ان کے پاس جاکر فرداً فرداً ہاتھ ملایا -وزیراعلیٰ پناہ گاہ میں قیام پذیر لوگوں کے ساتھ زمین پر بیٹھ گئے- وزیراعلیٰ نے لوگوں کے ساتھ بیٹھ کررات کا کھانا بھی کھایا اور بریانی اور زردے کے معیار کی تعریف کی -وزیراعلیٰ نے قیام کرنے والے لوگوں سے ان کے مسائل بھی پوچھے-وزیراعلیٰ نے لوگوں کے مسائل جلد حل کرنے کی یقین دہانی کرائی اور لوگوں کے مسائل کے حل کے لئے متعلقہ حکام کو ضروری ہدایات دیں -وزیراعلیٰ نے پناہ گاہ کے کچن کا بھی دورہ کیا۔علاوہ ازیں ٹوئٹر پیغام میں وزیراعلی پنجاب نے اپنے پیغام میں کہا کہ حکومت سنبھالنے کے بعد پنجاب کی یونیورسٹیوں کی اصلاحات پر کام کیا۔سردار عثمان بزدار نے کہا کہ 16وی سیز، ٹاپ مینجمنٹ میرٹ پر لائے، نئے کورسز تیار کیے اور امتحانی نظام کی بہتری کے لیے پلاننگ کی۔وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ ہر ضلع میں ڈسٹرکٹ یونیورسٹی، انٹرنیشنل اسٹینڈرڈ کی یونیورسٹی بنائیں گے، 8 یونیورسٹیوں پراسی سال کام شروع ہو چکا ہے، بنیادی قانونی ضروریات بھی پوری کی جا چکی ہیں۔

عثمان بزدار 

 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ صوبے کے عوام کی زندگیوں میں بہتری لانے کیلئے عملی اقدامات کر رہے ہیں -محکموں اور اداروں میں جدید دورکے تقاضوں کے مطابق اصلاحات کی جا رہی ہیں اورہمارے ان اقدامات کے دور رس اور مثبت نتائج سامنے آئیں گے -وزیر اعلی عثمان بزدار نے ایک بیان میں کہا کہ پنجاب بدل رہا ہے اور تبدیلی کے سفر میں ایک مثال بنے گا-سرکاری خزانے کو ذاتی استعمال کیلئے خرچ کرنے کے سابق کلچر کو ختم کیا ہے- ماضی کے حکمرانوں نے قومی وسائل کو اپنی ذاتی نمود و نمائش پر خرچ کیا جبکہ ہماری حکومت نے سرکاری دفاتر میں کفایت شعاری اور بچت کے کلچر کو فروغ دیاہے اوروزیر اعلی آفس کے اخراجات میں 60 فیصد کمی لائی گئی ہے -تحریک انصاف کی حکومت نے صوبے میں کرپشن فری کلچر کی داغ بیل ڈالی ہے - سابق ادوار میں کرپشن کے میگاسکینڈل منظر عام پر آتے رہے -ہماری حکومت کا کریڈٹ ہے کہ ایک بھی کرپشن کا سکینڈل نہیں ہے او رانشاء اللہ نہ ہو گاعثمان بزدارنے سڑکوں پر سونے والے افراد کے لئے عارضی پناہ گاہیں بنانے کی ہدایت کی ہے۔وزیراعلیٰ نے ضلعی انتظامیہ کو ہدایت کی کہ شدید سردی سے بچاؤ کے لئے عارضی پناہ گاہوں کا قیا م جلد سے جلد عمل میں لایاجائے-جن اضلاع میں مستقل پناہ گاہیں نہیں وہاں پر عارضی پناہ گاہیں بنائی جائیں گی-انہوں نے کہاکہ سڑکوں پر سونے والے افراد کو موسم کی سختی سے محفوظ بنانا ریاست کی ذمہ داری ہے- عارضی پناہ گاہیں قائم کرکے رپورٹ وزیراعلیٰ آفس بھجوائی جائے۔

وزیراعلی پنجاب 

مزید : صفحہ اول


loading...