شمالی کوریا نے میزائل تجربہ کیا تو امریکہ مناسب کارروئی کریگا: رابر ٹ اوبرین

شمالی کوریا نے میزائل تجربہ کیا تو امریکہ مناسب کارروئی کریگا: رابر ٹ اوبرین

  



واشنگٹن(اظہر زمان، بیورو چیف) اگر شمالی کوریا نے طویل رینج میزائیل یا ایٹم بم کا تجربہ کیا تو امریکہ کو بہت مایوسی ہو گی اور وہ ایک اعلیٰ سطح کی فوجی اور معاشی طاقت کے طور پر مناسب کارروائی کرے گا۔وائٹ ہاؤس کے نیشنل سکیورٹی ایڈوائزر رابرٹ اوبرین نے اتوار کے روز اس ردعمل کا اظہار کیا۔ اے بی سی ٹیلی ویژن کیساتھ ایک انٹرویو میں انہوں نے واضح کیا کہ ایسے کسی تجربے کا جواب دینے کیلئے امریکہ کی ”اوزاروں کی کٹ“ میں بہت سے اوزار موجود ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ”ہم اپنا فیصلہ محفوظ رکھیں گے اور ایسی صورت حال میں ایسا ہی جواب دیا جائے گا جیسا کہ ہم دیتے رہے ہیں اگر کم یانگ ان ایسا اقدام کرتے ہیں تو ہمیں غیر معمولی مایوسی ہو گی اور ہم اس مایوسی کا مناسب اظہار بھی کرینگے۔“ یاد رہے شمالی کوریا نے امریکہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شمالی کوریا کے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام پر اختلافات ختم کرنے کے لئے نئے طریق کار کی پیشکش کرے۔ شمالی کوریا کے لیڈر نے اسی ماہ دھمکی دی تھی کہ اگر امریکہ ان کی توقعات پورا کرنے میں ناکام رہا تو اسے ایک ناپسندیدہ ”کرسمس کا تحفہ“ بھی مل سکتا ہے۔ تاہم کرسمس کا موقع گزر کیااور شمالی کوریا کی طرف سے کوئی کارروائی دیکھنے میں نہیں ملی۔ امریکی فوجی کمانڈروں کا کہنا ہے کہ ایٹم بم کے تجربات شروع کر سکتا ہے جو اس نے 2017ء سے معطل کر رکھے ہیں۔

رابرٹ اوبرائن

مزید : صفحہ اول