شدید سردی، دھند سے نظام زندگی درہم برہم، ٹریفک حادثے میں 4افراد جاں بحق، 29زخمی 

     شدید سردی، دھند سے نظام زندگی درہم برہم، ٹریفک حادثے میں 4افراد جاں بحق، ...

  



لاہور،پشاور، اسلام آباد،کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) ملک کے بیشترعلاقوں میں کڑاکے کی سردی، میدانی علاقوں میں دھند بھی چھائی رہی جس سے ٹریفک کی روانی متاثر اور ٹرینوں کا شیڈول درہم برہم ہوگیا، اس صورتحال میں مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔کراچی سے گلگت تک سردی ہی سردی، میدانی علاقوں میں دھند کا راج برقرار رہا جس سے معمولات زندگی متاثر ہوئے، پنجاب اور سندھ میں دھند اندھا دھند چھا گئی، موٹر ویز اور نیشنل ہائی وے پر حد نگاہ انتہائی کم رہی، ڈرائیوز کو مشکلات کا سامنا رہا۔ سندھ کے بعض علاقے بھی دھند میں گم رہے۔ ٹرینوں کا شیڈول بھی دھند کے باعث بری طرح متاثر ہے۔ کراچی سے آنے والی قراقرم ایکسپریس 7 گھنٹے 55 منٹ تاخیر سے لاہور پہنچی، کراچی ایکسپریس 4 گھنٹے 50 منٹ، ملت ایکسپریس 12 گھنٹے 40 منٹ، پاک بزنس 10 گھنٹے اور پاکستان ایکسپریس 8 گھنٹے 50 منٹ تاخیر کا شکار ہوئی۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے آئندہ چند روز کے دوران ملک بھر میں سردی کی شدت میں مزید اضافہ ہوگا، آج کم سے کم درجہ حرارت سکردو میں منفی18، استور منفی 12، بگروٹ منفی 11، گلگت منفی 08، کالام منفی 05 اور قلات میں منفی 04 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ اسلام آباد 2، لاہور 6، کراچی 9، فیصل آباد 3 اور ملتان میں 6ریکارڈ کیا گیا۔مالم جبہ میں برف باری کا سلسلہ تھم گیا سیاحوں نے بڑی تعداد میں مالم جبہ کا رخ کر لیا برف پوش پہاڑ حسین وادی مالم جبہ میں روڈ بحالی کے بعد سیاحوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا۔لاہورائیر پورٹ پر دھند اور موسم خرابی کے باعث اندرون و بیرون ممالک سے آنے اورجانے والی 14پروازیں منسوخ جبکہ متعدد پروازیں تاخیرکاشکارہوئیں جس سے مسافروں کوشدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑ ا۔موٹروے ایم ون پشاور سے لے کر بر ہان تک شدید دھند کے باعث ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کر دی گئی ہے۔وادی کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں سردی کی لہر بدستور برقرار ہے جمعرات سے شمالی بلوچستان میں بارش اور برفباری کا سلسلہ شروع ہوجائے گا۔خیبر پختونخوا میں شدید سردی اور دھند کے سبب اسکولوں کی چھٹیوں میں توسیع کردی گئی۔محکمہ تعلیم خیبر پختون خوا کے مطابق تعطیلات بڑھانے کا باقاعدہ نوٹی فکیشن کل جاری کردیا جائے گا۔

دھند 

ساہیوال(آن لائن) دھند کے دوران ٹریفک کے حادثات میں چار افراد ہلاک اور 29زخمی ہو گئے۔9کی حالت نازک ہے۔ شیرانوالہ بنگلہ کمیر روڈ پر چک 158۔نائن۔ایل کے قریب تیز رفتار مو ٹر سائیکل اور رکشہ نمبر1313۔ایس۔ایل۔ایل میں ٹکر کے نتیجہ میں موٹر سائیکل سوار دو کاندار شہزاد احمد20سالہ ہلاک اور اسکا دوست شریف زخمی ہو گیا جبکہ موٹر سائیکلوں سے گر کر 60سالہ محمد سرور اور19۔سالہ فیضان 95۔سکس۔آر شدید زخمی ہو گئے۔دونوں کو شدید زخمی حالت میں سول ہسپتال ایمر جنسی لایا گیا جہاں دونوں نے دم توڑ دیا اور اس ہسپتال کے ملازم نعمان کا11سالہ بیٹا حسن مو ٹر سائیکل سے گر کر ہلاک ہو گیا۔جبکہ دیگر موٹر سائیکلوں کے آپس میں ٹکرانے اور مو تر سائیکلوں سے گر کر شفیق16سالہ ابرار احمد اور14سالہ علی محمد 22سالہ،فیروز16۔سالہ،جاوید 25سالہ،مدثر30سالہ،بشیر23سالہ،سفیان22سالہ،طلحہ 22سالہ سمیت 29۔افراد شدید زخمی ہو گئے جن میں 9افراد کی حالت نازک ہے۔تمام زخمیوں کو ڈسٹر کٹ ھیڈ کوارٹر ہسپتال ساہیوال دا خل کرا دیا گیاہے۔ 

ٹریفک حادثہ 

مزید : صفحہ اول


loading...