والد دوبارہ صدر بنے تو انکے ساتھ کام نہیں کرونگی، ایوانیکا ٹرمپ

  والد دوبارہ صدر بنے تو انکے ساتھ کام نہیں کرونگی، ایوانیکا ٹرمپ

  



واشنگٹن (این این آئی)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانیکا ٹرمپ نے کہا ہے کہ اگر ان کے والد دوبارہ امریکا کے صدر منتخب ہوئے تو وہ ان کے ساتھ کام نہیں کریں گی۔امریکی صدر کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ اس وقت وائٹ ہاس کی مشیر کے طور پر کام کر رہی ہیں۔ایک غیر ملکی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے ایوانکا ٹرمپ کا کہنا تھا کہ میرے اس فیصلے میں لچک رہے گی تاکہ اس بات کو یقین بنایا جائے کہ میرے لیے بچے اور ان کی خوشیاں اولین ترجیح ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ میرے بچے اور ان کی خوشیاں پہلے ہیں اور یہی میری اولین ترجیح ہوگی۔واضح رہے کہ جیراڈ کشنر ایوانکا ٹرمپ کے شوہر ہیں اور ان کے تین بچے ہیں۔ جیراڈ کشنر کو ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارت کا منصب سنبھالنے کے بعد اپنا سینیئر مشیر مقرر کیا تھا۔ایوانکا اور ان کے شوہر اپنے بچوں کے ہمراہ نیو یارک میں مقیم تھے تاہم سرکاری ذمہ داریاں اچھے انداز میں نبھانے کے لیے دونوں 2017 میں واشنگٹن منتقل ہوگئے۔ لبرل ذہن کے حامل اس جوڑے کی ٹرمپ انتظامیہ میں موجود قدامت پسند اراکین سے مبینہ محاذ آرائی رہی ہے، تاہم ایوانکا اس تنا سے انکار کرتی رہی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ میرے خیال میں میرے لیے میں یہاں نیچے ہی رہی ہوں، یہ صرف اثر انداز ہونے کا معاملہ ہے۔جب ان سے سیاسی مستقبل کے حوالے سے سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ آپ میرے بارے میں جاتنے ہیں، یہ سیاست ہے جس میں میرا رجحان کم ہے۔انہوں نے بتایا کہ ان کے لیے لوگوں کی زندگیوں کو بہتر بنانا اور پالیسیاں ہی اہم رہی ہیں۔

ایوانکا ٹرمپ

مزید : صفحہ اول


loading...