فیول پرائس ایڈ جسٹمنٹ‘ بجلی بلوں میں کرنٹ‘ صارفین کو سکتہ‘ حکومت مالا مال

فیول پرائس ایڈ جسٹمنٹ‘ بجلی بلوں میں کرنٹ‘ صارفین کو سکتہ‘ حکومت مالا مال

  



 ملتان(نیوز رپورٹر) بجلی بلوں میں بجلی کی قیمت سے زائد فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ(ایف پی اے) سرچارج کی رقم شامل ہونے سے صارفین بدستور شدید مشکلات کا شکار ہیں۔ صارفین کے مطابق بجلی کے حوالے سے مشکلات میں ہرماہ اضافہ ہورہا ہے۔ گزشتہ چار ماہ میں بجلی کے استعمال شدہ یونٹس کی قیمت ایک ہزار روپے جبکہ ایف پی اے سرچارج چار ہزار روپے تک آرہا ہے۔ یوں ایک صارف کو اوسطاً دسمبر 2019ء  میں پانچ ہزار روپے کی ادائیگی کرنا پڑ رہی ہے۔ حکومت، وزارت توانائی اور بجلی کی(بقیہ نمبر54صفحہ12پر)

 تقسیم کار کمپنیاں گیس اور ایل این جی سے بجلی کی پیداوار کے بجائے فرنس آئل سے بجلی کی پیداوار کو ایف پی اے سرچارج کی بھاری شرح کی وجہ بتایا گیا ہے۔ صارفین نے بجلی کے بھاری بلوں پر شدید احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

کرنٹ 

مزید : ملتان صفحہ آخر